گیس کی لوڈشیڈنگ کیوں شروع ہوئی؟اعلیٰ عہدیداروں کی غلط بیانی پکڑی گئی،وزیراعظم عمران خان کے حکم پر تحقیقات ،انکوائری رپورٹ میں حیرت انگیز انکشافات

  ہفتہ‬‮ 22 دسمبر‬‮ 2018  |  22:02

لاہور(این این آئی) اوگرا نے گیس لوڈ شیڈنگ کے حوالے سے انکوائری میں انکشاف کیا ہے کہ وزارت پیٹرولیم کو گیس کی پیداوار کے حوالے سے غلط معلومات فراہم کی گئیں۔ نجی ٹی وی کے مطابق آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی(اوگرا) نے سوئی ناردرن اور سوئی سدرن گیس کمپنیوں کے خلاف انکوائری مکمل کر لی ٗ اوگرا کی چیئرپرسن عظمی عادل سمیت تین رکنی ٹیم نے وزیراعظم عمران خان کے حکم پر تحقیقات کیں۔رپورٹ میں انکشاف ہوا کہ گیس کی پیداوار کے حوالے سے غلط معلومات فراہم کی گئیں، اور وزارتِ پیٹرولیم کو بتایا گیا کہگیس کی پیداوار ٹھیک اور


ایل این جی بھی سسٹم میں موجود ہے، اس لئے گیس کی لوڈ شیڈنگ نہیں ہوگی تاہم جب گیس لوڈ شیڈنگ ہوئی تو کہا گیا کہ پریشر کم ہوا ہے لوڈ شیڈنگ نہیں کی جارہی، جب کہ صوبہ پنجاب اور سندھ میں سردی کی آمد کے ساتھ ہی گیس لوڈ شیڈنگ شروع کر دی گئی۔ذرائع وزارت پیٹرلیم کے مطابق انکوائری مکمل ہونے کے بعد رپورٹ وزارت پٹرولیم و قدرتی گیس کو ارسال کر دی گئی ہے، انکوائری رپورٹ کی روشنی میں ایم ڈی سوئی نادرن اور سوئی سدرن گیس کمپنی کے خلاف کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

موضوعات:

loading...