پاکستان اور بھارت کی جانب سے ایل او سی پر جنگ بندی امارات اور ایران کاردعمل آگیا،دونوں ممالک سے بڑا مطالبہ کردیا

  منگل‬‮ 2 مارچ‬‮ 2021  |  10:49

اسلام آباد (این این آئی)متحدہ عرب امارات اور ایران نے پاکستان اور بھارت کی جانب سے ایل او سی پر جنگ بندی کا خیرمقدم کیا ہے ۔ترجمان ایرانی وزارت خارجہ سعید خطیب زادے نے کہاکہ پاکستان اور بھارت کے درمیان لائن آف کنٹرولپر جنگ بندی کا خیرمقدم کرتے ہیں، ایل او سی پر جنگ بندی کا پاکستان اور بھارت کا فیصلہ جنوبی ایشیا میں امن و استحکام کے حوالے سے اہم قدم ہے۔متحدہ عرب امارات کی وزارت خارجہ نے بھی جنگ بندی پر مثبت بیان جاری کر دیا۔یو اے ای وزارت خارجہ نے کہاکہ کشمیر کی متنازع سرحدوں پر پاک


بھارت افواج کے جنگ بندی کے فیصلے کو خوش آمدید کہتے ہیں،متحدہ عرب امارات کے جمہوریہ بھارت اور اسلامی جمہوریہ پاکستان سے دیرینہ تاریخی تعلقات ہیں،دونوں ممالک کی اس کامیابی کے حصول کے لیے کوششوں پر مسرت کا اظہار کرتے ہیں۔اماراتی وزارت خارجہ کی جانب سے کہا گیا کہ یہ خطے میں سلامتی، استحکام اور خوشحالی کے حصول کی جانب اہم قدم ہے،دونوں دوست ممالک کی جانب سے کشمیر میں مستقل جنگ بندی کی اہمیت پر زور دیتے ہیں،دونوں ممالک کے مابین دونوں ممالک کے عوام کی خواہشات کے عین مطابق سفارتی ذرائع سے مذاکرات کے زریعہ اعتماد سازی اور مستقل امن کے حصول پر زور دیتے ہیں۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

راﺅنڈ اباﺅٹ

اندر کمار گجرال بھارت کے 12 ویں وزیراعظم تھے‘ یہ 1997ءاور 1998ءکے درمیان ایک سال وزیراعظم رہے‘ اٹل بہاری واجپائی ان کے بعد وزیراعظم بنے تھے‘ گجرال جہلم میں پیدا ہوئے تھے‘ ان کی ساری تعلیم جہلم اور لاہور کی تھی اور یہ دل سے پاکستان اور بھارت کے تعلقات بہتر دیکھنا چاہتے تھے‘ میاں نواز شریف کے ....مزید پڑھئے‎

اندر کمار گجرال بھارت کے 12 ویں وزیراعظم تھے‘ یہ 1997ءاور 1998ءکے درمیان ایک سال وزیراعظم رہے‘ اٹل بہاری واجپائی ان کے بعد وزیراعظم بنے تھے‘ گجرال جہلم میں پیدا ہوئے تھے‘ ان کی ساری تعلیم جہلم اور لاہور کی تھی اور یہ دل سے پاکستان اور بھارت کے تعلقات بہتر دیکھنا چاہتے تھے‘ میاں نواز شریف کے ....مزید پڑھئے‎