’’مجھے ہر رو ز صبح خبر ملتی ہے آج جارہا ہوں ،کل جارہا ہوں‘‘ میرے علاوہ کوئی چوائس نہیں ہے،پانچ سال آسانی سے پورے کروں گا،وزیراعظم عمران خان کا حالات کا ڈٹ کر مقابلہ کرنے کا اعلان ‎

  اتوار‬‮ 28 جون‬‮ 2020  |  23:44

اسلام آباد(آن لائن) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ اپنے نظرئیے پر کھڑا رہوں گا،حالات کا ڈٹ کر مقابلہ کروں گا،میرے علاوہ کوئی چوائس نہیں ہے،پانچ سال آسانی سے پورے کروں گا،تحریک انصاف میں کوئی اختلاف نہیں سب متحد ہیں،جمہوری جماعت میں سب کو اظہار رائے کی آزادی ہے،شدید مالی مشکلات کے باوجود ٹیکس فری بجٹ دیا ہے، ارکان اسمبلی کے مسائل سے آگاہ ہوں کورونا وائرس وبا کےباعث اراکین سے ملاقاتیں نہیں ہوسکیں، اگر میں آج لوگوں کے ساتھ سمجھوتہ کرلوں تو تمام مسائل ختم ہوجائیں گے،تمام ارکان اسمبلی بجٹ منظوری کے وقت قومی اسمبلی اجلاس میں حاضری


یقینی بنائیں،حکومت تمام اتحاد جماعتوں کو ساتھ لے کر چلے گی۔ ان خیالات کا اظہار وزیر اعظم عمران خان نے اتوا ر کی رات حکومتی و اتحادی ارکان پارلیمنٹ کے ا عزاز میں وزیراعظم ہاؤس میں دئیے گئے اعشائیہ سے خطاب میں کیا۔ اعشائیہ میں تحریک انصاف کے ارکان قومی اسمبلی کے علاوہ اتحادی جماعتوں ایم کیو ایم، بلوچستان عوامی پارٹی،جی ڈی اے کے ارکان نے شرکت کی۔ شاہ زین بگٹی کی سربراہی میں جمہوری وطن پارٹی کا وفد بھی شریک ہوا۔جبکہ وفاقی وزراء ،بعض مشیران و معاونین خصوصی بھی اعشائیہ میں شریک ہوئے۔ ذرائع کے مطابق وزیر اعظم عمران خان نے اعشائیہ کی تقریب میں فرداً فرداً تمام ارکان سے بات کی اور شرکاء کو وفاقی بجٹ اور ملکی صورتحال پر اعتماد میں لیا ۔تقریب میں وفاقی بجٹ منظور کرانے کی حکمت عملی پر بات چیت کی گئی انہو ں نے تمام ارکان کے مطالبات اور تحفظا ت سنے۔وزیر اعظم نے ارکان اسمبلی کو ترقیاتی فنڈز فراہم کرنے کی یقین دھانی کرائی۔انہوں نے بجٹ کی منظوری کے وقت تمام ارکان کو حاضری یقینی بنانے کی ہدایت کی۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ اپنے نظرئیے پر کھڑا رہوں گا،حالات کا ڈٹ کر مقابلہ کروں گا میرے علاوہ کوئی چوائس نہیں ہے،پانچ سال آسانی سے پورے کروں گا،تحریک انصاف میںکوئی اختلاف نہیں سب متحد ہیں،جمہوری جماعت میں سب کو اظہار رائے کی آزادی ہے،تمام ارکان اسمبلی بجٹ منظوری کے لئے قومی اسمبلی اجلاس میں حاضری یقینی بنائیں۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ رواں سال بجٹ مشکل ترین مالی حالات میں پیش ہوا ہے۔شدید مالی مشکلات کے باوجود ٹیکس فری بجٹ دیا ہے،بجٹ اجلاس میں تمام ارکان کی حاضری ضروری ہے۔انہوں نے کہا کہ حکومت سنبھالی توملک چلانے کے لئے پیسے نہیں تھے،معیشت بہتر ہوئی تو کورونا وائرس آگیا،مشکل ترین حالات میں مجبوراً مشکل فیصلے کرنا پڑتے ہیں۔ارکان اسمبلی کے مسائل سے آگاہ ہوں کورونا وائرس وبا کے باعث اراکین سے ملاقاتیں نہیں ہوسکیں۔انہوں نے کہا کہ اگر میں آج لوگوں کے ساتھ سمجھوتہ کرلوں تو تمام مسائل ختم ہوجائیں گے ہم آج بھی اپنے نظرئیے پر کھڑے ہیں حکومتی مدت کے پانچ سال آسانی سے پورے کرسکتا ہوں۔و


موضوعات: