حکومت کی بہت بڑی سفارتی کامیابی کیا ہے؟ مہنگائی کا ایشو وزیراعظم بھی ماننے پرمجبور ہو گئے، کیا مہنگائی بارے رپورٹ کسی وقت سامنے آئے گی، عوام کو مہنگائی سے نجات مل جائے گی، مولانا فضل الرحمان کس بات کیلئے تیار ہیں؟ جاوید چودھری کا تجزیہ

  پیر‬‮ 17 فروری‬‮ 2020  |  21:53

میں سب سے پہلے آپ سے ایک درخواست کرنا چاہتا ہوں دنیا میں صرف تین ملک ہیں‘ افغانستان‘ نائیجیریا اور پاکستان جن میں اس وقت بھی پولیو موجود ہے اور یہ ہمارے لیے ڈوب مرنے کا مقام ہے‘ آج سے ملک میں پولیو مہم شروع ہو رہی ہے‘میری آپ سے ریکویسٹ ہے آپ خود بھی اپنے بچوں کو پولیو کی ویکسین پلوائیں اور دائیں بائیں موجود لوگوں کو بھی سمجھائیں خدارا اپنے اور دوسروں کے بچوں پر رحم کریں‘ دنیا میں اس بیماری کا کوئی علاج نہیں‘ آپ کا بچہ اگر ایک بار پولیو کا شکار ہو گیا تو بس


یہ ہو گیا پھر آپ کے پاس پچھتانے کے سوا کوئی آپشن نہیں بچے گا۔ اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتریس چار روزہ دورے پر پاکستان پہنچ گئے، یہ پاکستان کا وزٹ کرنے والے تیسرے سیکرٹری جنرل ہیں، ان کے دورے سے بین الاقوامی سطح پر پاکستان کا امیج بھی بہتر ہو گا اور اقوام متحدہ ہمارے ایشوز کو بھی سمجھ سکے گی، یہ حکومت کی بہت بڑی سفارتی کام یابی ہے اور ہم اس سفارتی کامیابی پر اسے مبارک باد پیش کرتے ہیں۔ یہ کامیابی اپنی جگہ لیکن مہنگائی کا ایشو بھی بڑھتا چلا جا رہا ہے، اتنا زیادہ کہ وزیراعظم بھی اسے ماننے پر مجبور ہو گئے ہیں، آج حکومت نے مہنگائی کے خلاف تحقیقاتی رپورٹ سینٹ میں پیش کرنی تھی لیکن وعدے کے باوجود یہ کام نہ ہو سکا چناں چہ اپوزیشن واک آؤٹ کر گئی، کیا رپورٹ کسی وقت سامنے آئے گی، مجرم پکڑے جائیں گے اور عوام کو مہنگائی سے نجات مل جائے گی، حکومت مولانا فضل الرحمن کے خلاف آرٹیکل سکس کے تحت مقدمہ قائم کرنا چاہتی ہے، مولانا بھی تیار ہو چکے ہیں، مولانا نے کیا جرم کیا؟ اور کیا حکومت اس میں واقعی سنجیدہ ہے؟


موضوعات: