یوکرین روس کے خلاف جنگ جیت سکتا ہے،نیٹو سربراہ

  پیر‬‮ 16 مئی‬‮‬‮ 2022  |  16:30

برسلز(این این آئی)معاہد ہ شمالی اوقیانوس کی تنظیم نیٹوکے سربراہ جینز سٹولٹن برگ نے کہا ہے کہ یوکرین روس کی جارحیت کو شکست دے سکتا ہے اور یہ جنگ جیت سکتا ہے۔فوجی اتحادیوکرائن کو فوجی امداد بھیجنے کا سلسلہ جاری رکھے۔میڈیارپورٹس کے مطابق

سٹولٹن برگ نے جرمن دارالحکومت برلن میں منعقدہ نیٹو کے جلاس میں کہاکہ یوکرین کے باشندے بہادری سے اپنے وطن کا دفاع کررہے ہیں، ہمیں یوکرین کی حمایت میں اپنے قدم بڑھانا چاہئیں اوراس کی امداد کو برقراررکھنا چاہیے۔انھوں نے کہا کہ یوکرین میں روس کی جنگ اس طرح نہیں چل رہی جیسا کہ روس نے منصوبہ بنایا تھا۔نیٹوکے سربراہ نے ویڈیو لنک کے ذریعے صحافیوں کو بتایا کہ روسی فوجی کیف پر قبضے میں ناکام رہے ہیں۔ وہ یوکرین کے ایک اورشہرخارکیف سے پیچھے ہٹ رہے ہیں اور ڈونبس میں ان کی بڑی جارحیت رک چکی ہے۔انھوں نے مزید کہا کہ اتحاد عبوری مدت کے لیے فن لینڈ اور سویڈن کو رکنیت دینے اور ان کی الحاق کی درخواست کے دوران سکیورٹی ضمانتیں مہیا کرنے پرغورکرے گا۔نیٹوکے سیکرٹری جنرل نے کہا کہ فن لینڈ اورسویڈن عبوری مدت کے بارے میں فکر مند ہیں،ہم اس (رکنیت کے)عمل کو تیزکرنے کی کوشش کریں گے۔ہم خطے میں نیٹو کی موجودگی بڑھانے سمیت سلامتی کی یقین دہانیاں فراہم کرنے کے طریقوں پرغور کریں گے۔



زیرو پوائنٹ

گھوڑا اور قبر

میرا سوال سن کر وہ ٹکٹکی باندھ کر میری طرف دیکھنے لگے‘ میں نے مسکرا کر سوال دہرا دیا‘ وہ غصے سے بولے ’’بھاڑ میں جائے دنیا‘ مجھے کیا لوگ آٹھ ارب ہوں یا دس ارب‘‘ میں نے ہنس کر جواب دیا’’ آپ کی بات سو فیصد درست ہے‘ ہمیں اس سے واقعی کوئی فرق نہیں پڑتا‘ ہمارے لیے صرف اپنی ....مزید پڑھئے‎

میرا سوال سن کر وہ ٹکٹکی باندھ کر میری طرف دیکھنے لگے‘ میں نے مسکرا کر سوال دہرا دیا‘ وہ غصے سے بولے ’’بھاڑ میں جائے دنیا‘ مجھے کیا لوگ آٹھ ارب ہوں یا دس ارب‘‘ میں نے ہنس کر جواب دیا’’ آپ کی بات سو فیصد درست ہے‘ ہمیں اس سے واقعی کوئی فرق نہیں پڑتا‘ ہمارے لیے صرف اپنی ....مزید پڑھئے‎