متحدہ عرب امارات میں مقیم غیر ملکی شہریوں کیلئے دھماکے دار خوشخبری ، امارات حکومت نے بڑا اعلان کردیا

28  جولائی  2019

ابوظہبی(این این آئی)متحدہ عرب امارات میں قیام پذیرغیرملکی خاندانوں کے لیے حکومت کی طرف سے ایک نئی خوش خبری سنائی گئی ہے۔ امارات کی حکومت نے مملکت میں رہنے والے غیرملکی خاندانوں کو وہاں پر مشروط طور پر کاروبارمیں حصہ لینے اوراپنے اقارب کو ورک پرمٹ جاری کرنے کی اجازت دے دی ہے۔عر ب ٹی وی کے مطابق اماراتی وزارت برائے افرادی قوت وآباد کاری ناصر الھاملی نے

ایک بیان میں بتایا کہ ملک میں رہنے والے غیرملکی خاندان اپنے قریبی اقارب کو کام کاج کے لیے ان کے پسند کے شعبوں میں بھرتی کرانے کی خاطر ورک پرمٹ جاری کرنے کامجاز قرار دیا گیا ہے۔ اس اقدام کا مقصد غیرملکی خاندانوں کو معاشی اور مالی طورپر مستحکم کرنا ہے۔حال ہی میں اماراتی وزیر برائے افرادی قوت کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا تھا کہ مملکت میں محدود پیمانے اور مشروط طور پر ورکنگ پرمٹ جاری کرنے کیعمل کا آغاز کردیا گیا۔ اس اعلان کے بعد مملکت میں رہنے والے غیرملکی خاندان مخصوص قواعد وضوابط کے تحت اپنے اقارب کو بیرون ملک سے کام کاج کے لیے ورکنگ پرمٹ دلا سکیں گے۔ اس سے قبل اماراتی حکومت نے ملک میں مقیم غیرملکی خاندانوں کو اپنی خواتین کو مستحکم کرنے کے لیے انہیں ملک میں لانے کی اجازت دی تھی مگر اب مرد حضرات کو بھی یہ اجازت حاصل ہوگئی ہے۔امارات کے سیکرٹری برائے افراد قوت سیف السویدی نے بتایا کہ اس فیصلے کا مقصد ملک میں رہنے والے غیرملکی خاندانوں کو مالی اور معاشی طور پر مستحکم کرنے میں ان کی مدد کرنا ہے۔نئے اصول کے تحت ورکنگ پرمٹ کی دو سال کے لیے فیس 300 درہم ہوگی چاہے امیدوار کسی خاص پیشے میں مہارت رکھتا ہے یا نہیں جب کہ ماضی میں یہ فیس پیشے اور آمدن کے اعتبار سے300 درہم سے پانچ ہزار درہم کے درمیان تھی۔

موضوعات:



کالم



مرحوم نذیر ناجی(آخری حصہ)


ہمارے سیاست دان کا سب سے بڑا المیہ ہے یہ اہلیت…

مرحوم نذیر ناجی

نذیر ناجی صاحب کے ساتھ میرا چار ملاقاتوں اور…

گوہر اعجاز اور محسن نقوی

میں یہاں گوہر اعجاز اور محسن نقوی کی کیس سٹڈیز…

نواز شریف کے لیے اب کیا آپشن ہے (آخری حصہ)

میاں نواز شریف کانگریس کی مثال لیں‘ یہ دنیا کی…

نواز شریف کے لیے اب کیا آپشن ہے

بودھ مت کے قدیم لٹریچر کے مطابق مہاتما بودھ نے…

جنرل باجوہ سے مولانا کی ملاقاتیں

میری پچھلے سال جنرل قمر جاوید باجوہ سے متعدد…

گنڈا پور جیسی توپ

ہم تھوڑی دیر کے لیے جنوری 2022ء میں واپس چلے جاتے…

اب ہار مان لیں

خواجہ سعد رفیق دو نسلوں سے سیاست دان ہیں‘ ان…

خودکش حملہ آور

وہ شہری یونیورسٹی تھی اور ایم اے ماس کمیونی کیشن…

برداشت

بات بہت معمولی تھی‘ میں نے انہیں پانچ بجے کا…

کیا ضرورت تھی

میں اتفاق کرتا ہوں عدت میں نکاح کا کیس واقعی نہیں…