پاکستان میں نئی سمارٹ سیڈان السوین کی قیمت کا اعلان کر دیا گیا

  جمعہ‬‮ 15 جنوری‬‮ 2021  |  22:27

کراچی (آن لائن + مانیٹرنگ)چنگان پاکستان نے نئی سمارٹ سیڈان السوین کی قیمت کا اعلان کر دیا ہے۔چنگان السوین کے حوالے سے وژن متعارف کراتے ہوئے ماسٹر چنگان کے سی ای او دانیال ملک نے کہا کہ 1.33L فائیو اسپیڈ مینوئل ٹرانسمیشن کی قیمت 2,199,000 اور 1.5L فائئیو سپیڈ ڈوئل کلچ آٹومیٹک ٹرانسمیشن کی قیمت2,399,000 روپے ہے جبکہ سب سے اوپر 1.5L LUMIERE کی قیمت 2,549,000 روپے ہے۔ تمام قیمتیں ایکس ۔ ڈیلر ہیں جس کا مطلب ہے کہ پشاور اور کراچی میں صارفین کسی قسم کی اضافی فریٹ لاگت کی ادائیگی کے بغیر اسی قیمت پر خرید سکتے ہیں۔قیمت


اسی قیمت پر خرید سکتے ہیں۔قیمت پر تبصرہ کرتے ہوئے ڈائریکٹر سیلز اینڈ مارکیٹنگ شبیر الدین نے کہا کہ اس کار کی ابتدائی قیمت پاکستان میں بہت سی ہیچ بیک گاڑیوں کی نسبت کم ہے، چاہے وہ مقامی طور پر تیار یا جاپان سے درآمد کی گئی ہوں جبکہ 1.5 DCT LUMIERE کی قیمت تقریباً اتنی ہی ہے جتنی مقامی سطح پر تیار کی جانے والی دیگر سب کمپیکٹ سیڈان کے سٹرپڈ ڈائون ماڈلز کی ہیں۔ اس سیگمنٹ میں تقابلی متبادل کاروں کی زائد قیمتوں کے مقابلہ میں 1.5L DCT Lumiere ایڈیشن میں پیش کئے جانے والے اضافی فیچرز میں سن روف، کروز کنٹرول، ٹی پی ایم ایس، اسٹارٹ سٹاپ ٹیکنالوجی اور ہیٹڈ سائیڈ مررز شامل ہیں۔ ان فیچرز کی مالیت کم از کم 2 لاکھ روپے ہے جو تقابلی متبادل ماڈلز میں زیادہ ہے جن کی قیمت تقریباً 30 لاکھ ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس لحاظ سے چنگان السوین 3.2m کی قیمت 2, 549, 000 روپے پیش کرتی ہے۔ پاکستان میں ہونڈا سٹی کا نیا ماڈل اپریل 2021ء میں متعارف کرائے جانے کا امکان ہے۔ میڈیا ذرائع کے مطابق اس قبل ہونڈا سٹیکا آخری ماڈل سال 2017ء میں متعارف کرایا گیا تھا، اب 2017ء کے بعد ہونڈا کمپنی نے ہونڈا سٹی کا نیا ماڈل متعارف کرانے کی تیاریاں تقریباً مکمل کرلی ہیں جو کہ پاکستانی صارفین کے لئے امید ہے اپریل کے مہینہ میں میسر ہو گا۔ نئی ہونڈا سٹی کی ممکنہ قیمت 26 لاکھ سے 30 لاکھ روپے تک ہونے کا امکان ہے۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

آخری موو

سینیٹ کا الیکشن کل اور پلاسی کی جنگ 23 جون 1757ءکو ہوئی اور دونوںنے تاریخ پر اپناگہرا نقش چھوڑا‘ بنگال ہندوستان کی سب سے بڑی اور امیر ریاست تھی‘پورا جنوبی ہندوستان نواب آف بنگال کی کمان میں تھا‘ سراج الدولہ بنگال کا حکمران تھا‘ دوسری طرف لارڈ رابرٹ کلائیو کمپنی سرکار کی فوج کا کمانڈر تھا‘ انگریز کے ....مزید پڑھئے‎

سینیٹ کا الیکشن کل اور پلاسی کی جنگ 23 جون 1757ءکو ہوئی اور دونوںنے تاریخ پر اپناگہرا نقش چھوڑا‘ بنگال ہندوستان کی سب سے بڑی اور امیر ریاست تھی‘پورا جنوبی ہندوستان نواب آف بنگال کی کمان میں تھا‘ سراج الدولہ بنگال کا حکمران تھا‘ دوسری طرف لارڈ رابرٹ کلائیو کمپنی سرکار کی فوج کا کمانڈر تھا‘ انگریز کے ....مزید پڑھئے‎