پاکستانی ٹیسٹ ٹیم کے نئے کپتان کیلئے نام فائنل کر لیا گیا

  اتوار‬‮ 25 اکتوبر‬‮ 2020  |  16:52

لاہور (یواین پی) پاکستانی ٹیسٹ ٹیم کے نئے کپتان کیلئے نام فائنل کر لیا گیا، پی سی بی نے بلے باز بابر اعظم کو ہی ٹیسٹ ٹیم کی کپتانی سونپنے کا فیصلہ کر لیا، حتمی اعلان نومبر کے دوسرے ہفتے میں ہوگا۔ تفصیلات کے مطابق میڈیا رپورٹس کے مطابق قومی ٹیسٹ ٹیم کے کپتان اظہر علی کوکپتانی سے ہٹانے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے، تاہم باقاعدہ اعلان اگلے ماہ کیا جائے گا۔ذرائع کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ مصباح الحق کی جانب سے چیف سلیکٹر کا عہدہ چھوڑنے کے بعد اظہر علی کیلئے بھی عہدہ بچانا مشکل ہوگیا


ہے۔ دورہ نیوزی لینڈ کے دوران اظہر علی کی بجائے محمد رضوان کو ٹیم کی قیادت کی ذمے داری سونپنے کی خبریں سامنے آئی تھیں، جن کی اب تردید کی گئی ہے۔بتایا گیا ہے کہ بابر اعظم کو ہی ٹیسٹ ٹیم کی کپتانی بھی سونپے جانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ذرائع کے مطابق پی سی بی تینوں طرز کی ٹیموں کیلئے ایک ہی کپتان مقرر کرنے کا خواہاں ہے۔ اس حوالے سے گزشتہ چند روز کے دوران غور و فکر کرنے کے بعد فیصلہ کر لیا گیا ہے۔ تاہم قومی ٹیسٹ ٹیم کے نئے کپتان کے نام کا اعلان نومبر کے دوسرے ہفتے میں کیا جائے گا۔ اظہر علی برطرفی کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ ان کی قیادت میں اب تک قومی ٹیم کی کارکردگی کافی ناقص رہی ہے۔اظہر علی کی ناقص کپتانی کی وجہ سے ہی دورہ انگلینڈ میں پاکستانی ٹیم جیتا ہوا ٹیسٹ میچ ہار گئی تھی۔ ذرائع کے مطابق پی سی بی کے ایم ڈی وسیم خان اس حوالے سے اظہر علی سے اہم ملاقات کر چکے ہیں، جبکہ چئیرمین پی سی بی احسان مانی اگلے ماہ قومی ٹیم کے کپتان سے ملاقات کریں گے۔ دورہ نیوزی لینڈ کیلئے قومی ٹیسٹ ٹیم کا اعلان نومبر کے دوسرے ہفتے میں کیا جائے گا۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

بڑے چودھری صاحب

انیس سو ساٹھ کی دہائی میں سیالکوٹ میں ایک نوجوان وکیل تھا‘ امریکا سے پڑھ کر آیا تھا‘ ذہنی اور جسمانی لحاظ سے مضبوط تھا‘ آواز میں گھن گرج بھی تھی اور حس مزاح بھی آسمان کو چھوتی تھی‘ یہ بہت جلد کچہری میں چھا گیا‘ وکیلوں کے ساتھ ساتھ جج بھی اس کے گرویدا ہو گئے‘ اس ....مزید پڑھئے‎

انیس سو ساٹھ کی دہائی میں سیالکوٹ میں ایک نوجوان وکیل تھا‘ امریکا سے پڑھ کر آیا تھا‘ ذہنی اور جسمانی لحاظ سے مضبوط تھا‘ آواز میں گھن گرج بھی تھی اور حس مزاح بھی آسمان کو چھوتی تھی‘ یہ بہت جلد کچہری میں چھا گیا‘ وکیلوں کے ساتھ ساتھ جج بھی اس کے گرویدا ہو گئے‘ اس ....مزید پڑھئے‎