دادی نے 10 سالہ معصوم پوتی کو ڈیڑھ لاکھ روپے کے عوض فروخت کردیا

  بدھ‬‮ 4 اگست‬‮ 2021  |  11:52

جیکب آباد(آن لائن)جیکب آباد میں دادی نے 10 سالہ معصوم پوتی کو ڈیڑھ لاکھ روپے کے عوضفروخت کردیا، پولیس نے بچی کو بازیاب کرکے طے شدہ شادی رکوادی،عدالت میں پیش، عدالت نے بچی کو ماموں کے حوالے کردیا۔تفصیلات کے مطابق جیکب آباد پولیس ذرائع کے مطابق جیکب آباد کے سول لائن تھانہ کی حدود اے ڈی سی کالونی کی رہائشی خاتون عربی گھنیو نے اپنی 10 سالہ معصوم پوتی اللہ ڈنی کو 30 سال کے شخص غلام یاسین گھنیو کو ڈیڑھ لاکھ روپے میں فروخت کردیا اور ان کی شادی بھی طے کرلی گئی تھی،جس پر بچی کے ماموں محمد


پناہ سمیجو نے ایسے واقعے کے خلاف وکیل کی معرفت عدالت میں درخواست دائر کی جس پر پولیس نے عدالت کے حکم پر مبینہ فروخت کی جانے والی بچی کو بازیاب کرکے سیکنڈ ایڈیشنل سیشن جج غلام علی کناسرو کی عدالت میں پیش کیا، عدالت نے غیر قانونی شادی کو روکنے اور بچی کو ماموں کے حوالے کرنے کے احکامات جاری کئے، عدالت نے فریقین کو پابند کیا کہ بچی کی 18 سال کی عمر تک شادی نہیں کرائی جائے گی


زیرو پوائنٹ

الیکشن کمیشن میں کیا ہو رہا ہے؟

میں اگر چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ کی ایک فقرے میں تشریح کروں تو یہ کہہ دینا کافی ہو گا ’’حکومت غلط آدمی سے ٹکرا گئی ہے‘ اس لڑائی میں صرف ایک فریق کو نقصان ہو گا اور وہ ہو گی حکومت ‘‘۔سکندر سلطان راجہ بھیرہ کے قریب چھوٹے سے گائوں چھانٹ میں پیدا ہوئے‘ گائوں میں بجلی تھی‘ ....مزید پڑھئے‎

میں اگر چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ کی ایک فقرے میں تشریح کروں تو یہ کہہ دینا کافی ہو گا ’’حکومت غلط آدمی سے ٹکرا گئی ہے‘ اس لڑائی میں صرف ایک فریق کو نقصان ہو گا اور وہ ہو گی حکومت ‘‘۔سکندر سلطان راجہ بھیرہ کے قریب چھوٹے سے گائوں چھانٹ میں پیدا ہوئے‘ گائوں میں بجلی تھی‘ ....مزید پڑھئے‎