لیگی رہنما عطا تارڑ کو گرفتار کر لیا گیا

  اتوار‬‮ 25 جولائی‬‮ 2021  |  22:45

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) عطاء اللہ تارڑ سمیت ن لیگ کے کارکنوں کو گرفتار کر لیا گیا، اس بات کا دعویٰ مریم اورنگزیب نے کیا ہے، نجی ٹی وی کے مطابق مریم اورنگزیب نے عطا تارڑ کو فوری رہا کرنے کا مطالبہ کیا ہے، عطا تارڑ گرفتار کارکنوں کو رہا کروانے گئے تھے، شہباز گل کا کہنا ہے کہ عطا تارڑ صبح سے پولیس کو دھمکیاں دے رہے تھے،اگر کوئی پولیس کی وردی پر ہاتھ ڈالے گا تو یہی ہو گا۔  پاکستان مسلم لیگ (ن)کی مرکزی ترجمان مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ پولنگ اسٹیشنز سے پارٹی پولنگ ایجنٹس کو باہر


نکالنے کا الزام عائد کرے ہوئے کہا ہے کہ ڈسکہ میں الیکشن کمیشن کا عملہ اغوا کر کے اور آزاد کشمیر میں مسلم لیگ (ن) کے پولنگ ایجنٹس کوباہر نکال کے ووٹ چوری کئے گئے،مختلف پولنگ اسٹیشنز پر مسلم لیگ (ن)کے پولنگ ایجنٹس کو داخل ہونے سے روکنا ڈسکہ الیکشن کا ایکشن ری پلے ہے۔ اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ حکومتی دباؤ کے ذریعے پولیس کو مسلم لیگ (ن)کے پولنگ ایجنٹس اور پارٹی رہنماؤں کو ہراساں کیا گیا، کئی پولنگ اسٹیشنز پر پولنگ ایجنٹس کی غیرموجودگی میں بیگز کو کھولا گیا، بیلٹ بکس کے حوالے سے بھی شکایات موصول ہوئی ہیں۔ انہوں نے کہاکہ عمران صاحب دھاندلی کے ذریعے آپ اپنی شکست کو فتح میں نہیں بدل سکتے،کارکنان اور عوام ہر حکومتی دھاندلی کی وڈیو اور تصاویر بنا کر عوام کے سامنے لائیں۔واضح رہے کہ پاکستان مسلم لیگ (ن) کی رہنما مریم نواز نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر پیغام جاری کیا ہے کہ ابھی تک جہاں سے بھی رزلٹ آ رہے ہیں، الحمد للہ مسلم لیگ ن جیت رہی ہے، انہوں نے اپنے ٹوئٹ میں مزید لکھا کہ ہوشیار رہیں، باخبر رہیں، دھند اور اندھیرے پر نظر رکھیں۔واضح رہے کہ نجی ٹی وی دنیا نیوز کے مطابق اب تک آنے والے غیر سرکاری اور غیر حتمی نتائج کے مطابق تحریک انصاف تمام جماعتوں پر برتری حاصل کئے ہوئے ہے لیکن مختلف پولنگ اسٹیشنز سے رزلٹ آنے کا سلسلہ جاری ہے، واضح رہے کہ آزاد جموں وکشمیر قانون ساز اسمبلی کے انتخابات کیلئے پولنگ کا آغاز صبح 8 بجے شروع ہوا تھا جو شام 5 بجے تک بغیر کسی وقفے تک جاری رہا۔ الیکشن کمیشن کی جانب سے آزادانہ، منصفانہ اور شفاف انتخابات کو یقینی بنانے کیلئے بھرپورانتظامات کئے گئے تھے۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

الیکشن کمیشن میں کیا ہو رہا ہے؟

میں اگر چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ کی ایک فقرے میں تشریح کروں تو یہ کہہ دینا کافی ہو گا ’’حکومت غلط آدمی سے ٹکرا گئی ہے‘ اس لڑائی میں صرف ایک فریق کو نقصان ہو گا اور وہ ہو گی حکومت ‘‘۔سکندر سلطان راجہ بھیرہ کے قریب چھوٹے سے گائوں چھانٹ میں پیدا ہوئے‘ گائوں میں بجلی تھی‘ ....مزید پڑھئے‎

میں اگر چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ کی ایک فقرے میں تشریح کروں تو یہ کہہ دینا کافی ہو گا ’’حکومت غلط آدمی سے ٹکرا گئی ہے‘ اس لڑائی میں صرف ایک فریق کو نقصان ہو گا اور وہ ہو گی حکومت ‘‘۔سکندر سلطان راجہ بھیرہ کے قریب چھوٹے سے گائوں چھانٹ میں پیدا ہوئے‘ گائوں میں بجلی تھی‘ ....مزید پڑھئے‎