واٹس ایپ نیا دلچسپ فیچر متعارف کروانے کو تیار

17  اگست‬‮  2022

نیویارک(این این آئی)لکھے ہوئے یا بولے گئے پیغامات کو جلد ایک دوسرے تک پہنچانے کے لیے دنیا بھر میں سب سے زیادہ استعمال کی جانے والی پیغام رساں ایپلیکیشن واٹس ایپ جلد ہی موسٹ وانٹڈ فیچر متعارف کروانے جا رہا ہے۔موصول ہونے والے پیغامات کو بے دھیانی میں ڈیلیٹ کرنے کی غلطی تو سب ہی کرتے ہیں

اور بعد ازاں پریشانی کا سامنا بھی۔ اب اس پریشانی سے جان چھڑوانے کے لیے واٹس ایپ نے صارفین کی آسانی کے لیے ڈیلیٹ شدہ پیغامات کو دوبارہ سے حاصل کرنے پر کام شروع کر دیا ہے، جلد ہی آنے والے اس نئے فیچر کی آزمائش جاری ہے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق واٹس ایپ کی جانب سے کچھ بیٹا ٹیسٹرز کے لیے حذف شدہ پیغامات کو دوبارہ سے واپس لانے کے فیچر پر کام کیا جا رہا ہے، اس فیچر کو جلد ہی متعارف کروادیا جائے گا۔اب اگر صارفین کی جانب سے موصول ہونے والے میسج کو حذف کیا گیا تو اِن کی اسکرین پر ایک چھوٹا سا پاپ اپ دکھائی دے گا جو حذف شدہ پیغام کو ان ڈو (واپس موصول)کرنے کا آپشن دے گا، یہ پاپ اپ چند سیکنڈ کے لیے اسکرین پر موجود رہے گا۔یہ نیا فیچر میڈیا فائلز، وائس نوٹ اور دستاویزات کو بھی واپس لانے کے لیے میسر ہوگا یا نہیں اس پر بات کرنا قبل از وقت ہے۔اس فیچر کے ساتھ واٹس ایپ صارف کو اپنی ڈسپلے پکچر میں تبدیلیاں کرنے کا بھی آپشن فراہم کیا جائے گا۔میڈیا رپورٹس کا بتانا ہے کہ یہ فیچر ابھی صرف بیٹا صارفین کے استعمال کے لیے زیرِ آزمائش ہیں، یہ فیچر کامیاب ہونے پر سب صارفین کے لیے دستیاب ہوگا۔میڈیا رپورٹس کے مطابق واٹس ایپ انتظامیہ اس فیچر کے ساتھ صارفین کے نمبر اور پرائیویسی سے متعلق بھی تبدیلیاں کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔



کالم



مرحوم نذیر ناجی(آخری حصہ)


ہمارے سیاست دان کا سب سے بڑا المیہ ہے یہ اہلیت…

مرحوم نذیر ناجی

نذیر ناجی صاحب کے ساتھ میرا چار ملاقاتوں اور…

گوہر اعجاز اور محسن نقوی

میں یہاں گوہر اعجاز اور محسن نقوی کی کیس سٹڈیز…

نواز شریف کے لیے اب کیا آپشن ہے (آخری حصہ)

میاں نواز شریف کانگریس کی مثال لیں‘ یہ دنیا کی…

نواز شریف کے لیے اب کیا آپشن ہے

بودھ مت کے قدیم لٹریچر کے مطابق مہاتما بودھ نے…

جنرل باجوہ سے مولانا کی ملاقاتیں

میری پچھلے سال جنرل قمر جاوید باجوہ سے متعدد…

گنڈا پور جیسی توپ

ہم تھوڑی دیر کے لیے جنوری 2022ء میں واپس چلے جاتے…

اب ہار مان لیں

خواجہ سعد رفیق دو نسلوں سے سیاست دان ہیں‘ ان…

خودکش حملہ آور

وہ شہری یونیورسٹی تھی اور ایم اے ماس کمیونی کیشن…

برداشت

بات بہت معمولی تھی‘ میں نے انہیں پانچ بجے کا…

کیا ضرورت تھی

میں اتفاق کرتا ہوں عدت میں نکاح کا کیس واقعی نہیں…