مولانا فضل الرحمن ٹرمپ کی بجائے رسول ؐکی سیرت کی پیروی کریں، قرآن پاک پڑھنے کا مشورہ دے دیا گیا

  ہفتہ‬‮ 16 جنوری‬‮ 2021  |  21:48

لاہور(این این آئی) وفاقی وزیر مذہبی امور پیر نور الحق قادری نے کہا ہے کہ میرا مولانا فضل الرحمن سے مطالبہ ہے کہ ٹرمپ کی بجائے رسول ؐکی سیرت کی پیروی کریں، پاک فوج کے خلاف جو مہم جوئی ہو رہی ہے اس کے تانے بانے دہلی سے شروع ہوتے ہوئے لندن کے راستے پاکستان پہنچتے ہیں،ہم نے متشدد قسم کا نہیں بلکہ مناسباسلامی ملک بنناہے، اسلامی ملک میں معتدل کےساتھ مدرسے،جدید یونیورسٹی،محافل ذکر،اسٹیڈیم اور کرکٹ ہاکی کے کھیل بھی ہوں گے، ملک میں عریانی نہیں ہوگی لیکن انٹر ٹینمنٹ ضرور ہوگا۔ سیرت اکیڈمی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے


انہوں نے کہا کہ مولانا فضل الرحمن ٹرمپ کی پیروی کر رہے ہیں، میرا مولانا فضل الرحمن سے مطالبہ ہے کہ ٹرمپ کی بجائے رسول کی سیرت کی پیروی کریں، مولانا فضل الرحمن قرآن کو پڑھیں کیونکہ فتنہ قتل سے بھی بدتر ہے،صدارتی نظام امیر المومنین کے قریب تر ہے لیکن یہ نظام قابل بحث ہے۔وفاقی وزیر مذہبی امور پیر نور الحق قادری نے مسجد کبری سمن آباد کا بھی دورہ کیا جہاں کل مسالک علما ء بورڈ کے چیئرمین مولانا عاصم مخدوم کی جانب سے استقبالیہ دیا گیا۔ استقبالیہ میں چیئرمین رویت ہلال کمیٹی مولانا عبدالخبیر آزاد،آرچ بشپ سبیسٹین فرانسس شاہ،پیر سید ناظم حسین شاہ،بشپ عرفان جمیل،ڈاکٹر مجید ایبل،پیر سید حبیب عرفانی سمیت دیگر نے بھی شرکت کی۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پیر نور الحق قادری نے کہا کہ ہمارا ملک سیاسی افرا تفری کامتحمل نہیں ہو سکتا،مینار پاکستان میں اپوزیشن کومنہ کی کھانہ پڑی،مدرسے کے طالب علم کوسیاسی گود میں نہیں بٹھا سکتے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا کام اللہ کے دین اور حکم کی طرف راغب کرنا اور یہ کام منبر سےسرانجام دیا جا سکتا ہے منبر،مسجد اور محراب کو جو آزادی پاکستان میں حاصل ہے کسی ملک میں نہیں،علما ئے کرام کو معاشرے کی بہتری کے لیے اپنا کرداد ادا کرنا ہو گا، منبر سے ایسے بیان نہ دیں جس سے کسی کی دل آزاری ہو،پاکستان جدید اسلامی فلاحی ملک ہے جسے ریاست مدینہ کے طرز پر بنائیں گے،پاکستان مخالف اوراسلام مخالف پاکستان کے ساکھ کو کھوکھلا کرنا چاہتے ہیں لیکن یہ سب ناکام ہوگئے ہے اور آئندہ بھی ناکام ہوں گے۔پاک فوج کے خلاف جو مہم جوئی ہو رہی ہے اس کے تانے بانے دہلی سے شروع ہوتے ہوئے لندن کے راستے پاکستان پہنچتے ہیں،اس ملک میں امن خوشخالی اور کامیابی میں پاک فوج کااہم کردار ہے، پاکستان اسلام کا قلعہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن انتشار اور فتنہ پھیلانے کی کوشش کر رہی ہے،اس نظام کو تباہ نہیں ہونے دینگے۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

ایک قیمتی سوال

چارلس ٹی میٹکلف  1785ءمیں کلکتہ میں پیدا ہوا تھا‘ والد ایسٹ انڈیا کمپنی میں ڈائریکٹر تھا اور کلکتہ میں تعینات تھا‘ چارلس نے لندن سے تعلیم حاصل کی اور 1801ءمیں واپس آ کر کمپنی کی نوکری کر لی‘ وہ بنگال کے گورنر جنرل لارڈ ویسلے کا پرائیویٹ سیکرٹری تھا‘ برطانیہ اس وقت نپولین بونا پارٹ سے لڑ رہا ....مزید پڑھئے‎

چارلس ٹی میٹکلف  1785ءمیں کلکتہ میں پیدا ہوا تھا‘ والد ایسٹ انڈیا کمپنی میں ڈائریکٹر تھا اور کلکتہ میں تعینات تھا‘ چارلس نے لندن سے تعلیم حاصل کی اور 1801ءمیں واپس آ کر کمپنی کی نوکری کر لی‘ وہ بنگال کے گورنر جنرل لارڈ ویسلے کا پرائیویٹ سیکرٹری تھا‘ برطانیہ اس وقت نپولین بونا پارٹ سے لڑ رہا ....مزید پڑھئے‎