وزارت خارجہ نے سعودی عرب ، قطر کے شیوخ ، شہزادوں کو ملک کے دیگر شہروں میں شکار کرنے کی اجازت دے دی

  اتوار‬‮ 27 دسمبر‬‮ 2020  |  0:14

دلے والا ( آن لائن ) وزارت خارجہ نے سعودی عرب اور قطر کے شیوخ اور شہزادوں کو بھکر سمیت ملک کے دیگر شہروں میں بین الاقوامی تحفظ کے حامل نایاب پرندے تلور کا شکار کرنے کی اجازت دے دی ہے عرب کے شیوخ کھیل کے طور پر معدومیت کے خطرے سے دوچارنایاب پرندے تلور کا شکار اپنے عقابوں سے کرتے ہیں کیونکہ یہ دنیا میں درمیانی سائز کا کم پرواز پر انتہائی تیز پرواز کرنے والا پرندہ ہے عرب شہزا دے اور شیوخ اپنے عقابوں کو اس پرندے پر اپنی آنکھوں کے سامنے جھپٹنا اور شکار کرتے دیکھنا ان


کی تسکین کا باعث ہوتا ہے وزارت خارجہ نے سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلیمان کو بھکر میں شکار کرنے کی اجازت دے دی ہے اب وہ بھکر میں آزادی سے شکار کر سکیں گے جبکہ قطری شہزادے اس سے قبل بھکر کے بارڈر ایریا تحصیل نور پور تھل میں شکار کیلیے اہنے لاو لشکر سمیت پڑاو ڈال چکے ہیں اور خیمہ بستیاں آباد ہوچکی ہیں بیرون ملک سے آنے والے زیادہ تر شہزادے اور شیوخ تلور پرندے کا شکار کرتے ہیں شایی خاندان کے افراد کو نایاب نسل کے پرندے کا شکار کرنے کی اجازت دینے پر عوام ہمیشہ سخت رد عمل کا اظہار کرتی ہے کیونکہ علاقہ تھل میں ہزاروں ایکڑ پر کاشت چنے کی فصل ان کی شکاری گاڑیوں سے تباہ و برباد ہو جاتی ہے وزیراعظم عمران خان اس سے قبل اپوزیشن کا حصہ رہنے کے دوران سابقہ حکومتوں کو تلور کے شکار کرنے کی اجازت دینے پر ہمیشہ آڑے ہاتھوں لیتے رہے ہیں۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

آخری موو

سینیٹ کا الیکشن کل اور پلاسی کی جنگ 23 جون 1757ءکو ہوئی اور دونوںنے تاریخ پر اپناگہرا نقش چھوڑا‘ بنگال ہندوستان کی سب سے بڑی اور امیر ریاست تھی‘پورا جنوبی ہندوستان نواب آف بنگال کی کمان میں تھا‘ سراج الدولہ بنگال کا حکمران تھا‘ دوسری طرف لارڈ رابرٹ کلائیو کمپنی سرکار کی فوج کا کمانڈر تھا‘ انگریز کے ....مزید پڑھئے‎

سینیٹ کا الیکشن کل اور پلاسی کی جنگ 23 جون 1757ءکو ہوئی اور دونوںنے تاریخ پر اپناگہرا نقش چھوڑا‘ بنگال ہندوستان کی سب سے بڑی اور امیر ریاست تھی‘پورا جنوبی ہندوستان نواب آف بنگال کی کمان میں تھا‘ سراج الدولہ بنگال کا حکمران تھا‘ دوسری طرف لارڈ رابرٹ کلائیو کمپنی سرکار کی فوج کا کمانڈر تھا‘ انگریز کے ....مزید پڑھئے‎