بی جے پی کی ایک خاتون رکن سے پیسے کس نے لئے،کشمیریوں کے نام پر پیسے کمانے والا غدار کون ہے؟ شیخ رشید سے بھی 10 سوال پوچھ لئے گئے

  ہفتہ‬‮ 26 ستمبر‬‮ 2020  |  20:06

لاہور(این این آئی) پاکستان مسلم لیگ (ن) پنجاب کے صدر رانا ثنا اللہ خان نے بھی وزیر ریلوے شیخ رشید سے 10سوالات پوچھ لئے جبکہ رانا ثنا اللہ خان نے کہا ہے کہ شیخ رشید آئین، قانون اور جمہوریت کا غدار ہے،نواز شریف کے ایک ایک لفظ کی سچائی شیخ رشید ہر روزثابت کر رہا ہے،عمران نیازی کاچپڑاسی فوج کو سیاست میں گھسیٹ کر خطرناک کھیل کھیل رہا ہے،عمران نیازی نے ہر دور میں اداروں کو متنازعہ بنایا،شیخ رشید کے باس نے مودی کی الیکشن مہم چلائی اور کہا کہ اس کے جیتنے سے کشمیر کا مسئلہ حل ہو جائے


گا۔ اپنے بیان میں رانا ثنا اللہ نے شیخ رشید سے دس سوالات میں پوچھا واضح کرنا ہوگا کہ کیا شیخ رشید افواجِ پاکستان کا ترجمان ہے یا آئی ایس پی آر، منتخب وزیراعظم کے خلاف سازش کی اور کون امپائر کی انگلی کا انتظار کر رہا تھا2014 کے دھرنے کی فنڈنگ کس نے کی، یہ فنڈنگ کہاں سے آئی،کیا دھرنے میں پولیس کے سر پھاڑنے، سول نا فرمانی کی کال، بجلی کے بل جلانے کا پلان جیمز گولڈ سمتھ کے گھر بنا،مودی کی الیکشن کمپین کون کر رہا تھا،بی جے پی کی ایک خاتون رکن سے پیسے کس نے لئے،کشمیریوں کے نام پر پیسے کمانے والا غدار کون ہے،کشمیر کا سودا کیوں اور کیسے کیا،کلبھوشن کا سہولت کار کون ہے، کون اس کی وکالت کر رہاہے،قونصلر سروس کون فراہم کر رہا ہے،فارن فنڈنگ بے نامی اکاؤنٹس کے ذریعے کس نے اور کہاں سے فنڈنگ کی، آج تک ملک کے خلاف سازش ہو رہی ہے،بتایا جائے جوہری دھماکوں کے وقت ملک سے بھاگ جانے والا ٹارزن کون تھا،مشرف کے ریفرنڈم میں مال کس نے کمایا؟۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

مولانا روم کے تین دروازے

ہم تیسرے دروازے سے اندر داخل ہوئے‘ درویش اس کو باب گستاخاں کہتے تھے‘ مولانا کے کمپاﺅنڈ سے نکلنے کے تین اور داخلے کا ایک دروازہ تھا‘ باب عام داخلے کا دروازہ تھا‘ کوئی بھی شخص اس دروازے سے مولانا تک پہنچ سکتا تھا‘شاہ شمس تبریز بھی اسی باب عام سے اندر آئے تھے‘ مولانا صحن میں تالاب ....مزید پڑھئے‎

ہم تیسرے دروازے سے اندر داخل ہوئے‘ درویش اس کو باب گستاخاں کہتے تھے‘ مولانا کے کمپاﺅنڈ سے نکلنے کے تین اور داخلے کا ایک دروازہ تھا‘ باب عام داخلے کا دروازہ تھا‘ کوئی بھی شخص اس دروازے سے مولانا تک پہنچ سکتا تھا‘شاہ شمس تبریز بھی اسی باب عام سے اندر آئے تھے‘ مولانا صحن میں تالاب ....مزید پڑھئے‎