غربت اور بیروزگاری سے دلبرداشتہ 4 معصوم بیٹیوں کا باپ ذہنی توازن کھو بیٹھا، مفلسی کی افسوسناک داستان

  ہفتہ‬‮ 15 اگست‬‮ 2020  |  18:50

تلہار(این این آئی)غربت اور بیروزگاری سے دل برداشتہ 4 معصوم بیٹیوں کا باپ غریب کسان اپنا ذہنی توازن کھو بیٹھا، گاؤں والوں نے باندھ دیا۔ تفصیلات کے مطابق تلہار کے نواحی گاوں انور خان نظامانی میں 4 معصوم لڑکیوں کا والد غریب کسان نوجوان بھاریو کوہلی غربت اور بیروزگاری سے دل برداشتہ ہوکر اپنا ذھنی توازن کھو بیٹھا، گاؤں والوں نے اس کو زنجیر سے باندھ کر قید کرلیا، نوجوان بھاریو کوہلی کے ورثا کا کہنا ہے کہنوجوان غربت اور بیروزگاری کی وجہ سے عید پر اپنی چار معصوم بیٹیوں کو کچھ بھی خرید کر نہیں دے سکا، اور اسی


صدمے میں اس کا ذہنی توازن خراب ہوگیا، جبکہ غربت کی وجہ سے اس کا اعلاج بھی نہیں ہو سکا ہے، گاؤں والوں نے اس کو  باندھ کر قید کرلیا ہے، تاکہ وہ کسی پر حملہ کر کے اس کو نقصان نہ پہنچا سکے، رشتے داروں نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ نوجوان کا سرکاری خرچ پر علاج کروایا جائے۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

قاسم پاشا کی گلیوں میں

آیا صوفیہ کے سامنے دھوپ پڑی تھی‘ آنکھیں چندھیا رہی تھیں‘ میں نے دھوپ سے بچنے کے لیے سر پر ٹوپی رکھ لی‘ آنکھیں ٹوپی کے چھجے کے نیچے آ گئیں اور اس کے ساتھ ہی ماحول بدل گیا‘ آسمان پر باسفورس کے سفید بگلے تیر رہے تھے‘ دائیں بائیں سیکڑوں سیاح تھے اور ان سیاحوں کے درمیان ....مزید پڑھئے‎

آیا صوفیہ کے سامنے دھوپ پڑی تھی‘ آنکھیں چندھیا رہی تھیں‘ میں نے دھوپ سے بچنے کے لیے سر پر ٹوپی رکھ لی‘ آنکھیں ٹوپی کے چھجے کے نیچے آ گئیں اور اس کے ساتھ ہی ماحول بدل گیا‘ آسمان پر باسفورس کے سفید بگلے تیر رہے تھے‘ دائیں بائیں سیکڑوں سیاح تھے اور ان سیاحوں کے درمیان ....مزید پڑھئے‎