ملک میں پٹرول کا بحران حکومتی نظام کے مفلوج ہونے کی نشانی ہے، عوام کو سزا نہ دی جائے، شہباز شریف نے حکومت کو کھری کھری سنا دیں

  پیر‬‮ 8 جون‬‮ 2020  |  18:38

لاہور(این این آئی) پاکستان مسلم لیگ (ن)کے صدر شہباز شریف نے کہا ہے کہ ملک میں پٹرول کا بحران حکومتی نظام کے مفلوج ہونے کی نشانی ہے،حکومت پٹرولیم کمپنیوں کے ساتھ بیٹھ کر فوری حل نکالے، عوام کو سزا نہ دی جائے۔ اپنے بیان میں انہوں نے پٹرولیم کے شعبے کے ساتھ ڈالر، معیشت اور گیس کے شعبے والی سنگین غلطی دہرائی جارہی ہے۔ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں تاریخی کمی کے باوجود حکومت عوام کو ریلیف نہیں دے سکی۔عوام حیران ہے کہ دنیا میں تیل کی قیمتیں منفی میں جا چکی ہیں لیکن پاکستان میں تیل نایاب ہوچکا ہے۔ کوروناکے


سبب ایک دوسرے سے فاصلے پر رہنے کی ضرورت کے دوران پٹرول کی قلت نے ہر جگہ عوام کے ہجوم لگا دئیے ہیں۔حکومت کی بدانتظامی اور نااہلی کا طوطی سر چڑھ کر بول رہا ہے۔وزیراعظم پرائیویٹ کمپنیوں کو تیل کی قیمتوں میں کمی کا فائدہ عوام کو دینے کی تلقین کر رہے ہیں لیکن خود اس پر عمل نہیں کر رہے۔تیل کی قیمتوں میں تاریخی کمی کا فائدہ بجلی کی قیمتوں میں کمی کرکے عوام کو منتقل کیوں نہیں کیاگیا؟،تیل کی قیمتوں میں تاریخی کمی کا فائدہ گیس کی قیمتوں میں کمی کرکے عوام کو منتقل کیوں نہیں کیاگیا؟،تیل کی قیمتوں میں تاریخی کمی کا فائدہ خوراک اور اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں کمی کرکے عوام کو منتقل کیوں نہیں کیاگیا؟۔انہوں نے کہاکہ پٹرول کی قلت سے ٹڈی دل کے خلاف کارروائیوں پر منفی اثر پڑے گا، پہلے سے درپیش مسائل مزید سنگین ہونے کا خطرہ ہے۔


موضوعات: