جماعت الدعوۃ کے مزید4اہم رہنماؤں کو گرفتارکرلیاگیا

  جمعرات‬‮ 10 اکتوبر‬‮ 2019  |  22:51

لاہور (آن لائن) جماعت الدعوۃ کے چار مزید رہنماؤں کو سی ٹی ڈی کی جانب سے گرفتار کر لیا گیا ہے۔ ان کے خلاف درج کئے گئے مقدمات کی بنیادکالعدم قرار دیے گئے الانفال ٹرسٹ سے تعلق کو بنایا گیا ہے۔ سی ٹی ڈی کی طرف سے گرفتار کئے گئے رہنماؤں میں جماعت الدعوۃ کے مرکزی رہنما حافظ عبدالسلام بن محمد، پروفیسر ظفر اقبال، محمد یحییٰ عزیزاور محمدا شرف شامل ہیں۔ جماعت الدعوۃ کے گرفتار رہنماؤں کے اثاثے بھی منجمند کر دیے گئے ہیں۔سی ٹی ڈی کی طرف سے الزام عائد کیا گیا ہے کہ گرفتار رہنماؤں کا تعلق کالعدم قرار


دیے گئے الانفال ٹرسٹ سے ہے اور اسی بنیاد پر انہیں گرفتار کیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ الانفال ٹرسٹ نے مختلف شہروں میں زمین خرید کر مساجد کی تعمیر کا کام کیا ہے۔ چند ماہ قبل جماعت الدعوۃ کے سربراہ حافظ محمدسعید کو جب گرفتار کیا گیا تو ان پر بھی یہی مقدمہ بنایا گیا تھا کہ منڈی بہاؤالدین کے ملکوال علاقہ میں سات مرلہ کی زمین پرجس ٹرسٹ کی جانب سے مسجد بنائی گئی تھی اس ٹرسٹ کے ممبران میں حافظ محمد سعید کا نام بھی شامل تھا۔ حافظ محمد سعید کی طرح جماعت الدعوۃ کے جمعرات کے دن گرفتار کئے گئے چار رہنماؤں کوبھی اقوام متحدہ کی سلامتی کمیٹی کی قرارداد 1267کے تحت گرفتار کیا گیا ہے تاہم ان کے خلاف درج مقدمات الانفال ٹرسٹ سے تعلق کی بنیاد پر بنائے گئے ہیں اوران کے خلاف بھی اسی نوعیت کے الزامات لگائے گئے ہیں جو مساجد کی تعمیر وغیرہ کے حوالہ سے حافظ محمد سعید پر لگائے گئے تھے۔ جماعت الدعوۃ کے چار مزید رہنماؤں کو سی ٹی ڈی کی جانب سے گرفتار کر لیا گیا ہے۔ ان کے خلاف درج کئے گئے مقدمات کی بنیادکالعدم قرار دیے گئے الانفال ٹرسٹ سے تعلق کو بنایا گیا ہے۔

موضوعات:

loading...