لاڑکانہ، میڈیکل کی طالبہ نمرتانے خود کشی نہیں کی بلکہ اسے قتل کیاگیا،بھائی ڈاکٹر وشال کے افسوسناک انکشافات

  منگل‬‮ 17 ستمبر‬‮ 2019  |  18:24

کراچی (این این آئی)لاڑکانہ کے بی بی آصفہ ڈینٹل کالج کی فائنل ایئر کی طالبہ کیبھائی ڈاکٹروشال نے ڈاکٹر نمرتا کی خودکشی کو قتل قرار دے دیا۔طالبہ کے بھائی ڈاکٹروشال کا میڈیاسے گفتگو کے دوران کہنا تھا کہ واقعہ ہراسگی نہیں بلکہ قتل ہے، نمرتا ساڑھے بارہ بجے کالج میں مٹھائی تقسیم کررہی تھی، ڈیڑھ گھنٹے میں ایسا کیا ہوگیا کہ اس نے خودکشی کرلی۔ڈاکٹروشال نے اپنی بہن ڈاکٹرنمرتا کا پوسٹ مارٹم نجی اسپتال سے کرانیکامطالبہ کیا ہے۔یونیورسٹی انتظامیہ کے مطابق نمرتا بی ڈی ایس فائنل ایئرکی طالبہ تھی، اور اس نے مبینہ طور پر ہاسٹل نمبر 3 میں اپنیکمرے کے


پنکھے سے لٹک کرخودکشی کی تھی۔یونیورسٹی وائس چانسلر انیلا عطاالرحمن نے نمرتا کی گردن پر پائے جانے والے نشان کوخود کشی قرار دیتے ہوئے کہا کہ وجوہات جاننے کے لیے پرنسپل چانڈکا میڈیکل کالج کی سربراہی میں کمیٹی قائم کردی ہے۔صوبائی وزیرنثارکھوڑو نے نوٹس لیتے ہوئے تحقیقات کی یقین دہانی کرائی ہے جبکہ پولیس نے طالبہ کے کمرے کو سیل کر کے تحقیقات شروع کردی ہے۔دوسری جانب نمرتا کی لاش میرپور ماتھیلو منتقل کر دی گئی ہے، نمرتا کی آخری رسومات میرپورماتھیلو میں ادا کی جائیں گی۔

loading...