کابل دھماکہ مذاکراتی عمل سبوتاژ کرنے کی سازش ہے، اسفندیار ولی خان نے انتباہ کردیا

  اتوار‬‮ 18 اگست‬‮ 2019  |  20:08

پشاور(این این آئی)عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی صدر اسفندیار ولی خان نے کابل میں شادی کی تقریب کے دوران بم دھماکے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے سانحے میں خواتین اور معصوم بچوں سمیت بے گناہ انسانوں کی جانی نقصان پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے، اپنے ایک مذمتی بیان میں انہوں نے کہا کہ کابل دھماکہ امن مذاکرات کو سبوتاژ کرنے کی سازش ہے اور ایسے نازک وقت میں بدترین انسانیت سوز کارروائی سے مذاکراتی عمل کو نقصان پہنچ سکتا ہے، انہوں نے افغان حکومت اور عوام سے دلی ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ


اے این پی اس اندوہناک سانحے میں ان کے ساتھ ہے،انہوں نے کہا کہ علاقے کے ملکوں کا مخلصانہ تعاون ہی دہشت گردی کی لعنت کا مقابلہ کرنے کا واحد طریقہ ہے، انہوں نے حملے میں جاں بحق ہونے والوں کے لواحقین، افغان حکومت اور عوام کے ساتھ تعزیت کی اور کہا کہ ایک ایسے وقت میں جب افغان امن عمل کیلئے مذاکرات جاری ہیں حالیہ کارروائی افغان سرزمین پر جاری دہشت گردی کے خلاف جنگ میں جلتی پر تیل کا کام کرے گی، اسفندیار ولی خان نے کہا کہ پاکستان ' افغانستان میں امن واستحکام کی مکمل بحالی کے حوالے سے بین الاقوامی کوششوں کی حمایت پر زور دے۔ عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی صدر اسفندیار ولی خان نے کابل میں شادی کی تقریب کے دوران بم دھماکے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے سانحے میں خواتین اور معصوم بچوں سمیت بے گناہ انسانوں کی جانی نقصان پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے، اپنے ایک مذمتی بیان میں انہوں نے کہا کہ کابل دھماکہ امن مذاکرات کو سبوتاژ کرنے کی سازش ہے اور ایسے نازک وقت میں بدترین انسانیت سوز کارروائی سے مذاکراتی عمل کو نقصان پہنچ سکتا ہے

موضوعات:

loading...