تحریک انصاف کا لانگ مارچ ،وزیراعظم شہباز شریف نے وفاقی وزارت داخلہ سے پلان طلب کرلیا

  پیر‬‮ 23 مئی‬‮‬‮ 2022  |  16:54

اسلام آباد (این این آئی)پاکستان تحریک انصاف کے لانگ مارچ کے اعلان کے بعد وزیراعظم شہباز شریف نے وفاقی وزارت داخلہ سے پلان طلب کرلیا۔حکومتی ذرائع کے مطابق وزیر داخلہ رانا ثنا اللہ کو لانگ مارچ کے موقع پر امن وامان کے قیام سے متعلق اقدامات کی رپورٹ بھی پیش کرنے

کی ہدایت کی گئی ،رپورٹ کی روشنی وفاقی کابینہ اہم فیصلوں کی منظوری دے گی ۔ ذرائع کے مطابق وفاقی کابینہ کااجلاس منگل کو متوقع ہے ۔ ذرائع کے مطابق پنجاب پولیس،ایف سی اور رینجرز کی خدمات حاصل کرنے سے متعلق بھی فیصلہ ہوگا۔دوسری جانبوزیراعظم شہبازشریف نے گردے اور جگر کے ہسپتال پاکستان کڈنی اینڈ لیور انسٹیٹیوٹ(پی کے ایل آئی) لاہور کے بورڈ بحالی کا باضابطہ حکم جاری کردیا ۔ پیر کو وزیراعظم آفس کے میڈیا ونگ سے جاری بیان کے مطابق ڈاکٹر سعید اخترکو امریکہ سے واپس بلا کر پھر پی کے ایل آئی کا چیئرمین مقرر کردیا گیا ۔ وزیراعظم شہبازشریف نے گزشتہ روز پی کے ایل آئی کے بورڈ آف گورنرز کے اجلاس کی صدارت کی تھی۔ چار سال قبل ڈاکٹر سعید اختر عدالتی کارروائی اور دیگر مسائل کے بعد امریکہ واپس لوٹ گئے تھے۔ ڈاکٹر سعید اختر شہبازشریف کے جذبہ دلانے پر امریکہ سے سب کچھ چھوڑ کر پاکستان آئے تھے۔ وزیراعظم شہبازشریف نے ڈاکٹر سعید اختر کو واپس لانے میں ذاتی طور پر کردار ادا کیا۔ پی کے ایل آئی گردے اور جگر کی پیوند کار ی کا جدید ترین اور عالمی معیار کا حامل اولین ادارہ ہے۔ یاد رہے کہ وزیراعظم شہبازشریف نے بطور وزیراعلی یہ منصوبہ جگر اور گردے کے مریضوں کو بیرون ملک علاج کے مہنگے اخراجات اور سفری دقتوں سے بچانے کے لئے بنایا تھا۔ عمران خان حکومت میں اس منصوبے کو بھی سیاسی انتقام کا نشانہ بنایاگیا۔



زیرو پوائنٹ

گھوڑا اور قبر

میرا سوال سن کر وہ ٹکٹکی باندھ کر میری طرف دیکھنے لگے‘ میں نے مسکرا کر سوال دہرا دیا‘ وہ غصے سے بولے ’’بھاڑ میں جائے دنیا‘ مجھے کیا لوگ آٹھ ارب ہوں یا دس ارب‘‘ میں نے ہنس کر جواب دیا’’ آپ کی بات سو فیصد درست ہے‘ ہمیں اس سے واقعی کوئی فرق نہیں پڑتا‘ ہمارے لیے صرف اپنی ....مزید پڑھئے‎

میرا سوال سن کر وہ ٹکٹکی باندھ کر میری طرف دیکھنے لگے‘ میں نے مسکرا کر سوال دہرا دیا‘ وہ غصے سے بولے ’’بھاڑ میں جائے دنیا‘ مجھے کیا لوگ آٹھ ارب ہوں یا دس ارب‘‘ میں نے ہنس کر جواب دیا’’ آپ کی بات سو فیصد درست ہے‘ ہمیں اس سے واقعی کوئی فرق نہیں پڑتا‘ ہمارے لیے صرف اپنی ....مزید پڑھئے‎