اے پی سی شروع ہونے سے پہلے اپوزیشن جماعتوں کو بڑا دھچکا اہم ترین سیاستدان کا شرکت سے انکار

  اتوار‬‮ 20 ستمبر‬‮ 2020  |  11:59

اسلام آباد،لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک،این این آئی)بلوچستان نیشنل پارٹی کے سربراہ اختر مینگل نے اے پی سی میں شرکت سے معذرت کر لی ۔ تفصیلات کے مطابق اختر مینگل کی طرف سے طبیعت میں خرابی کے باعث آل پارٹیز کانفرنس میں شرکت سے معذرت کی گئی ہے ۔اپوزیشن کی گیارہ جماعتوں پر مشتمل اے پی سی میں اختر مینگل کی جانب سے ان کی پارٹی بی این پی کا وفد شرکت کرے گا ۔اس سے پہلے جماعت اسلامی نے بھی اے پی سی میں شرکت سے صاف انکار کردیا ہے ، امیر جماعت اسلامی پاکستان سینٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ


اپوزیشن بتاتی بھی نہیں کہ اس پر حکومت کا ساتھ دینے کیلئے کیا دبا ئوتھا،آئی ایم ایف کی غلامی کی دستاویز پر دستخط کرنے سے ملک پر قیامت گزرگئی لیکن پارلیمنٹ کی بڑی جماعتوں نے حکومت کی مرضی پر قانون سازی میں اس کاساتھ دیا،اپوزیشن کی اے پی سی کا ایجنڈا ملک کو مشکلات کی دلدل سے نکالنے،آئین کی بالادستی قائم کرنے اور ملک میں اسلامی نظام کے نفاذ کی کوئی کوشش ہوتی تو جماعت اسلامی صف اول میں ہوتی مگراس اے پی سی کاایجنڈا ہی کچھ لوگوں کے ذاتی مفادات کے گرد گھومتا ہے، ملک کی تباہی کے ذمہ داروں کے ساتھ نہیں بیٹھ سکتے۔ اے پی سی اپوزیشن کا حق ہے،اسے عوام کے سامنے اپنا پروگرام رکھنا چاہئے۔پی ٹی آئی حکومت ن لیگ، پیپلزپارٹی اورمشرف حکومتوں کی وارث حکومت ہے،پی ٹی آئی نے سابقہ حکومتوں کی پالیسیوں کو ہی جاری رکھا ہے، تبدیلی آئی نہ کوئی وعدہ پورا ہوا، اسلام اور پاکستان حکومت کا نہیں ہمارا مسئلہ ہے،علما و مشائخ کو پاکستان بچانے کیلئے آگے بڑھنا ہوگا۔ان خیالات کا اظہا ر انہوں نے مولانا عبد الستار نیازی کی یاد میں منعقدہ مجاہد ملت سیمینار سے خطاب اور بعد ازاں میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر صدر علما و مشائخ رابطہ کونسل میاں مقصود احمد،بابا شفیق بٹ، پیر شفاعت رسول قادری،سید عاشق حسین بخاری اور سیکرٹری اطلاعات قیصر شریف بھی موجود تھے۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

دعا

میرے پاؤں زمین پر گڑھ کر رہ گئے‘ میں آگے بڑھناچاہتا تھا لیکن مجھے یوں محسوس ہوا جیسے میرے جسم سے ساری توانائی نکل گئی اور میں نے زبردستی ایک قدم بھی آگے بڑھانے کی کوشش کی تومیں جلے‘ سڑے اور سوکھے درخت کی طرح زمین پر آ گروں گا‘ میں چپ چاپ‘ خاموشی سے ان کے پاس ....مزید پڑھئے‎

میرے پاؤں زمین پر گڑھ کر رہ گئے‘ میں آگے بڑھناچاہتا تھا لیکن مجھے یوں محسوس ہوا جیسے میرے جسم سے ساری توانائی نکل گئی اور میں نے زبردستی ایک قدم بھی آگے بڑھانے کی کوشش کی تومیں جلے‘ سڑے اور سوکھے درخت کی طرح زمین پر آ گروں گا‘ میں چپ چاپ‘ خاموشی سے ان کے پاس ....مزید پڑھئے‎