اسرائیل نے مسلمانوں کی تاریخی مسجد کو نائٹ کلب میں تبدیل کردیا‎

  منگل‬‮ 16 اپریل‬‮ 2019  |  12:18

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) تاریخی مسجد نائٹ کلب میں تبدیل ۔میڈیا رپورٹس کے مطابق اسرائیل نے مقبوضہ بیت المقدس کی تاریخی مسجد الاحمر کو نائٹ کلب میں تبدیل کر دیا۔ ایک اسرائیلی کمپنی نے تیرہویں صدی کی جنوبی بیت المقدس میں واقع الاحمر مسجد کو نائٹ کلب اور شادی ہال میں تبدیل کردیا۔ فلسطینی اسلامک اینڈوومنٹ ایجنسی کے سیکرٹری خیر طبری کے مطابق یہ مذہبی دہشت گردی ہے۔یہ فلسطین کی تاریخی مساجد میں سے ایک مسجد ہے جو 1948ء میں یہودیوں کے قبضے میں چلی گئی تھی۔ نائٹ کلب میں بدلنے سے پہلے اسے سکول اور الیکشن کمپینز کے لیے استعمال کیا


جاتا رہا لیکن اب اس مسجد کو نائٹ کلب میں تبدیل کر دیا گیا ہے۔ فلسطینی مسلمانوں نے اسے دوبارہ مسجد بنانے کی درخواست دی لیکن تاحال عدالت نے کوئی فیصلہ نہیں دیا۔ یاد رہے کہ اس سے قبل بھی کئی مساجد کو شراب خانوں اور نائٹ کلبوں میں تبدیل کیا جا چکا ہے۔اسرائیل کی اس حرکت پر مسلمانوں نے شدید ردعمل کا اظہار کیا ہے ۔

موضوعات:

loading...