اسلامی بینکاری کے شعبہ کے اثاثہ جات بینکاری کے شعبہ کے مجموعی اثاثہ جات کے 14.4 فیصد تک پہنچ گئے

  اتوار‬‮ 15 ستمبر‬‮ 2019  |  14:10

ا سلام آباد (آن لائن) اسلامی بینکاری کے شعبہ کے اثاثہ جات بینکاری کے شعبہ کے مجموعی اثاثہ جات کے 14.4 فیصد تک بڑھ گئے ہیں۔ سٹیٹ بینک آف پاکستان کی رپورٹ کے مطابق جون 2018ء کے اختتام پر اسلامی بینکنگ کی صنعت کے اثاثے بینکاری کی صنعت کے مجموعی اثاثہ جات کے 12.9 فیصد تھے جو گزشتہ مالی سال 2018-19 ء کے اختتام پر 14.4 فیصد تک پہنچ گئے۔رواں سال 2019ء کی دوسری سہ ماہی کے دوران اسلامی بینکاری کے اثاثہ جات کے حجم میں 7.3 فیصد کا اضافہ ہونے سے اثاثہ جات کی مالیت 2.99 کھرب روپے تک


بڑھ گئی جو پہلی سہ ماہی کے اختتام پر 2.79 کھرب روپے تھے ، ایس بی پی کے مطابق گزشتہ مالی سال کے اختتام پر اسلامی بینکاری کے شعبہ کے ڈیپازٹس میں بھی 9.8 فیصد کا اضافہ ہوا ہے اور ان کا حجم 241 ارب روپے تک بڑھ گیا جومالی سال 2017-18ء کے اختتام پر 216 ارب روپے تھا۔رپورٹ کے مطابق اسلامی بینکاری کے شعبہ میں ترقی کے وسیع امکانات موجود ہیں اور صارفین روایتی بینکاری کے شعبہ میں ترقی کے وسیع امکانات موجود ہیں اور صارفین روایتی بینکاری کی بجائے اسلامی بینکاری کی سہولیات /خدمات سے استفادہ کو ترجیح دیتے ہیں جس کی وجہ سے گزشتہ چند سال کے دوران شعبہ کی شرح نمو میں نمایاں اضافہ ہوا ہے۔

موضوعات:

loading...