آرمی چیف کی تعیناتی کا عمل کب شروع ہوگا وزیر دفاع خواجہ آصف نے بتا دیا

9  ‬‮نومبر‬‮  2022

اسلام آبا د(آئی این پی)وزیردفاع خواجہ آصف نے کہا ہے کہ آرمی چیف کی تعیناتی کا عمل ابھی شروع نہیں ہوا تاہم ایک ہفتے میں شروع ہوجائیگا۔ایک نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ کوئی بندہ اپنا نہیں ہوتا ان کی وفاداری اپنے ادارے کے ساتھ ہوتی ہے۔

نوازشریف کا تجربہ دیکھ لیں۔خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ طریقہ کار کے مطابق آرمی چیف کی تعیناتی کیلیے وزیراعظم ہاس نام بھجوانے کیلئے خط لکھتا ہے اور وزارت دفاع اس کے جواب میں ڈوزیئر بھیجتی ہے، ناموں کی تعداد سے فرق نہیں پڑیا۔ان کا کہنا تھا کہ جنرل قمر جاوید باجوہ کی تعیناتی کے وقت وزیراعظم نے فیصلہ آخری2 دن میں کیاتھا جبکہ جنرل راحیل شریف کے وقت بھی 2 دن پہلے تک صورتحال فلوڈ تھی۔خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ عمران خان کی مایوسی آرمی چیف کی تعیناتی سے متعلق ہے، آرمی چیف کی تعیناتی ہی عمران خان کا سار اسیاپا ہے، عمران خان کا کوئی اصول اور روایت نہیں۔تحریک انصاف کے احتجاج سے متعلق ان کا کہنا تھا کہ 40،50 افراد پنجاب اور کے پی پولیس کیساتھ سڑک بلاک کرکے بیٹھے ہیں، ایک شخص ملک کے سسٹم کو تباہ کرنے کے چکر میں ہے تاہم ان کا کہنا تھا کہ گور نرراج نہیں لگنا چاہیے،29 نومبر تک صبر کرنا چاہیے۔وزیردفاع کا کہنا تھا کہ عمران خان 9 سال سے خیبرپختونخوا میں حکومت کررہا ہے، وفاق میں بھی 4 سال حکومت کی، کوئی ایک وعدہ پورا کیا؟ عمران خان ہماریساتھ عدلیہ بحالی تحریک میں بند ہوا تھا 4دن تک جیل میں روتا رہا تھا۔

موضوعات:



کالم



فواد چودھری کا قصور


فواد چودھری ہماری سیاست کے ایک طلسماتی کردار…

ہم بھی کیا لوگ ہیں؟

حافظ صاحب میرے بزرگ دوست ہیں‘ میں انہیں 1995ء سے…

مرحوم نذیر ناجی(آخری حصہ)

ہمارے سیاست دان کا سب سے بڑا المیہ ہے یہ اہلیت…

مرحوم نذیر ناجی

نذیر ناجی صاحب کے ساتھ میرا چار ملاقاتوں اور…

گوہر اعجاز اور محسن نقوی

میں یہاں گوہر اعجاز اور محسن نقوی کی کیس سٹڈیز…

نواز شریف کے لیے اب کیا آپشن ہے (آخری حصہ)

میاں نواز شریف کانگریس کی مثال لیں‘ یہ دنیا کی…

نواز شریف کے لیے اب کیا آپشن ہے

بودھ مت کے قدیم لٹریچر کے مطابق مہاتما بودھ نے…

جنرل باجوہ سے مولانا کی ملاقاتیں

میری پچھلے سال جنرل قمر جاوید باجوہ سے متعدد…

گنڈا پور جیسی توپ

ہم تھوڑی دیر کے لیے جنوری 2022ء میں واپس چلے جاتے…

اب ہار مان لیں

خواجہ سعد رفیق دو نسلوں سے سیاست دان ہیں‘ ان…

خودکش حملہ آور

وہ شہری یونیورسٹی تھی اور ایم اے ماس کمیونی کیشن…