من پسند مافیاؤں کو ٹیسٹنگ سروسز کے نام پر نوازے جانے کے عمل کو ختم کیا جائے، نوجوانوں نے وزیراعظم سے اہم مطالبہ کر دیا

  بدھ‬‮ 16 اکتوبر‬‮ 2019  |  23:24

راولپنڈی(آن لائن)بے روزگاری کے ہاتھوں مجبور لا تعداد نوجوانوں نے وزیر اعظم عمران خان سے اپیل کی ہے کہ وہ سرکاری اداروں میں بھرتی کیلئے گذشتہ حکومتوں کی جانب سے من پسند مافیاؤں کو ٹیسٹنگ سروسز کے نام پر نوازے جانے کے عمل کو ختم کریں. ٹیسٹ اور انٹر ویو کے نام پر بے روزگار نوجوانوں سے اربوں روپے بٹورنے والی ٹیسٹنگ ایجنسیوں کا وجود دنیا بھر میں کہیں نہیںمگر ہمارے گزرے ہوئے حکمرانوں نے اپنے من پسند لوگوں کو نوازنے کیلئے انہیں لائسنس جاری کئے کہ وہ سرکاری اداروں میں بھرتی کے نام پر بیروزگار نوجوانوں کو لوٹیں. سرکاری


اداروں میں نوکری کیلئے درخواستیں دینے کی غرض سے مری روڈ، سیٹلائٹ ٹاؤن، صدر، صادق آباد اور دیگر علاقوں میں بینکوں کے باہر ٹیسٹنگ ایجنسیوں کے کھاتے میں فیسیں جمع کروانے کیلئے لائنوں میں لگے نوجوانوں کی بڑی تعداد نے کہا کہ ان ٹیسٹنگ ایجنسیوں کو سرکاری اداروں کودرکار افرادی قوت کی اہلیت کے بارے میں کوئی علم نہیں ہوتا اور سارا کام رشوت پر چلتا ہے. ڈھوک کالا خان کے رہائشی دو بھائیوں نے اپنی بپتا سناتے ہوئے کہا کہ وہ گذشتہ ڈیڑھ سال سے فیسیں دے دے کر تھک چکے ہیں مگر ٹیسٹنگ ایجنسیوں سے وہ پوری محنت کے باوجود کلئیر نہیں ہو پا رہے. انہوں نے کہا کہ جس ادارے کو ملازمین کی ضرورت ہوتی ہے وہ باآسانی امیدواروں سے درخواستیں وصول کرکے ان کی شارٹ لسٹنگ اور اس کے بعد ٹیسٹ انٹرویو وغیرہ کر سکتا ہے مگر ہمارے ملک میں کرپشن اور مال بٹورنے کے نت نئے طریقے ایجاد کرنے والوں کو کوئی پوچھنے والا نہیں. انہوں نے کہا کہ ہمیں وزیر اعظم عمران خان سے امید ہے کہ وہ اس کانوٹس لیں گے اور ٹیسٹنگ سروسز ایجنسیوں کے فضول کاروبار کو بند کروائیں گے تاکہ بے روزگار نوجوانوں سے ٹیسٹنگ فیسوں کے نام پر اربوں روپے کی لوٹ مار ختم ہو سکے۔

loading...