سابق وزیراعلیٰ پنجاب کی اسٹیبلشمنٹ کیساتھ ڈیل ۔۔۔؟ شہباز شریف اور مریم نواز کے درمیان لڑائی کی وجہ سامنے آگئی

  منگل‬‮ 25 جون‬‮ 2019  |  12:15

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)سینئر صحافی صابر شاکر نے نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے انکشاف کیا ہے کہ شریف خاندان کے اندر کافی مسائل نے جنم لیا ہوا ہے ۔ سابق وزیراعظم میاں نواز شریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز شریف کو شک ہے کہ شہباز شریف اسٹیبلشمنٹ کیساتھ ڈیل کر کے خود کو بچالیں گے جبکہ نواز شریف کی نااہلیت برقرار رہے گیاور کسی قسم کا این آر او نہیں دیا جائے گا۔ جبکہ دوسری جانب نجی ٹی وی پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے سابق وزیر دفاع اور(ن) لیگ کے سینئر رہنما خواجہ آصف نے کہاہے(ن)


لیگ کا بیانیہ وہی ہے جو نواز شریف کا ہے، پارٹی میں مکمل اتفاق ہے کہ بیانیہ نواز شریف کا ہے اور وہی چلے گا،نواز شریف کا بیانیہ آئین کا بیانیہ ہے کہ حاکمیت پاکستان کی عوام کی ہے۔ اگر شہباز شریف اور مریم نواز کا کوئی اختلاف ہے تو وہ ایسا نہیں جسے جھگڑے سے تشبیہ دی جاسکے۔ سابق وزیردفاع کا کہنا تھا کہ ن لیگ میں ایک رائے یہ بھی ہے کہ حکومت کو ہٹانے کیلئے فوری طورپر تحریک چلائی جائے،ن لیگ میں اس موضوع پر مختلف آراء ہیں، میں شہباز شریف اور مریم نواز کی رائے کے درمیان کھڑا ہوں، ان دونوں پالیسیوں کو ملا کر ہماری پالیسی ہونی چاہئے، ان دونوں آراء کے درمیان کہیں ہمارا راستہ ہے، نواز شریف سے میرا جذباتی لگاؤ ہے، میں سمجھتا ہوں کہ میری رائے نواز شریف کی رائے کے قریب ہوگی، مجھے کلیم ہے کہ میں نواز شریف کو اچھی طرح جانتا ہوں۔ خواجہ آصف نے مزیدکہا کہ شہباز شریف اور مریم نواز کی بات گڈ کوپ بیڈ کوپ والی نہیں ہے، مریم نے جو بات کی ہے وہ میری اور شہباز شریف کی بھی رائے ہے کہ حکومت ہماری میثاق معیشت کی پیشکش پر عملدرآمد چاہتی ہے تو بجٹ میں عوام دشمن اقدامات کو واپس لے کر عوام دوست اور بزنس فرینڈلی بجٹ بنایا جائے، بجٹ میں ترامیم کی جاسکتی ہیں اس کیلئے بجٹ میں ایک دو دن تاخیر بھی ہوجائے تو کوئی فرق نہیں پڑے گا، اگر ہماری تجاویز پر پیشرفت ہوتی ہے تو حکومت اور اپوزیشن میثاق معیشت بھی کرسکتی ہیں۔

موضوعات:

loading...