پی پی اور جے یوآئی (ف) کا ملکر سیاسی لڑائی لڑنے کا فیصلہ،دونوں جماعتوں کا حکومت کو ٹف ٹائم دینے کا مشترکہ پلان تیار

  پیر‬‮ 11 فروری‬‮ 2019  |  23:06

اسلام آباد(آن لائن)پیپلزپارٹی اور جمعیت علماء4 اسلام ف نے ملکر سیاسی لڑائی لڑنے کا فیصلہ کرلیا، جس کے تحت دونوں جماعتوں نے حکومت کو ٹف ٹائم دینے کا مشترکہ پلان تیارکرلیا، مولانا فضل الرحمن مارچ میں ملین مارچ کرتے اسلام آباد پہنچیں گے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق پیپلزپارٹی کے شریک چیئرمین اور جمعیت علماء4 اسلام ف مولانا فضل الرحمن نے مشترکہ سیاسی لڑائی لڑنے کی حکمت عملی تیار کرلی۔بتایا گیا ہے کہ مولانافضل الرحمان اور آصف زرداری ملکر سیاسی لڑائی لڑیں گے۔ مولانافضل الرحمان اور آصف زرداری کے درمیان ملاقات ہوئی ہے۔ جس میں ملکر حکومت کو ٹف ٹائم دینے


اور اسلام آباد کی جانب ملین مارچ پر مشاورت کی گئی۔ذرائع کا کہنا ہے کہ سربراہ جے یوآئی ف مولانا فضل الرحمان اگلے مہینے مارچ میں ملین مارچ کرتے ہوئے اسلام آباد پہنچیں گے۔ملین مارچ جب اسلام آباد پہنچ جائے گا تو پھر طے کیا جائے گا کہ حکومت کیخلاف دھرنا دینا ہے یا صرف احتجاج کے ذریعے ہی حکومت کو ٹف ٹائم دیا جائے۔ جمعیت علماء4 اسلام ف کے ملین مارچ میں اسلام آباد میں ن لیگ ، اے این پی ، پیپلزپارٹی ،سمیت دیگر سیاسی و مذہبی جماعتیں بھی شریک ہوسکتی ہیں۔ جس سے حکومت کو یقیناًمشکلات کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے۔دوسری جانب چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری بھی 18ویں ترمیم میں ردوبدل کی صورت میں ملین مارچ کا اعلا ن کرچکے ہیں۔بلاول بھٹو رواں دنوں امریکا اور یورپ کے 10روزہ دورے پر گئے ہوئے ہیں۔اسی طرح سابق صدر آصف زرداری عوامی اجتماعات میں واضح اعلان کرچکے ہیں کہ اب نیا الیکشن ہوگا تاریخ نہیں دے سکتے، عمران خان سکسرلگاتے ہیں، آؤٹ ہوجائیں گے، خود سلیکٹڈ اور دوسروں پر الزام لگاتے ہیں، عمران خان شوکت عزیز کی طرح ہے، اپوزیشن جماعتوں کے اکٹھے ہونے کا کریڈٹ عمران خان کو جاتا ہے۔

loading...