نوازشریف کی ہسپتال منتقلی ، این آراو کی خبروں پر حکومتی ردعمل بھی سامنے آگیا، واضح اعلان کردیا

  اتوار‬‮ 3 فروری‬‮ 2019  |  17:25

اسلام آباد (این این آئی)وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے میڈیا امور افتخار درانی نے واضح کیا ہے کہ این آر ار کسی کو نہیں ملے گا ، نوازشریف کے حوالے سے عدالتی فیصلوں کو قبول کرینگے ،واقعہ کی شفاف تحقیقات کی جا رہی ہیں ، متاثرہ خاندان کے تمام مطالبات کو پورا کیا جائے گا۔ایک انٹرویومیں انہوں نے کہا کہ کسی کیساتھ بھی کوئی ذاتی دشمنی نہیں ہے ۔ انہوں نے کہاکہ نواز شریف کی صحت کے حوالے سے مناسب سہولتیں دینے کیلئے حکومت پنجاب کو ہدایات دی گئی ہیں۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ دوست ممالک


اور بین الاقوامی برادری نے وزیراعظم کی قیادت اور پاکستان تحریک انصاف کی حکومت پر مکمل اعتماد کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان قومی مفادات کو ترجیح دیتے ہیں۔ واقعہ ساہیوال کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے یقین دہانی کرائی کہ واقعہ کی شفاف تحقیقات کی جا رہی ہیں اور متاثرہ خاندان کے تمام مطالبات کو پورا کیا جائے گا۔ ایک سوال پر انہوں نے کہاکہ عمران خان کا ٹھوس موقف ہے کہ کسی کو بھی این آر او نہیں دیا جائے گا۔ انہوں نے کہاکہ حکومت سابق وزیراعظم محمد نواز شریف کے حوالے سے عدالتی فیصلوں کو قبول کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ ایمنسٹی انٹرنیشنل کے مطابق بدعنوانی پاکستان کا سب سے بڑا مسئلہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کی حکومت تمام بدعنوان عناصر کے خلاف بلاتفریق احتساب کے عمل کو یقینی بنا رہی ہے اور کوئی بھی بدعنوان عنصر احتساب کے عمل سے بچ نہیں سکتا۔ معاون خصوصی نے کہا کہ پی ٹی آئی کی خیبرپختونخوا کی گزشتہ حکومت کے دوران کوئی ایک بھی کرپشن کا سکینڈل سامنے نہیں آیا۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت قومی دولت لوٹنے والوں سے رقم وصول کرنے کے لیے عملی اقدامات کر رہی ہے۔ ایک سوال کے جواب میں افتخار درانی ن کہاک کہ وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار ایک ایماندار شخص ہیں اور یقین دہانی کرائی کہ وہ صوبے کی ترقی اور فلاح و بہبود کے لیے ڈلیور کریں گے۔

موضوعات:

loading...