پنجاب میں رینجرز آپریشن ۔۔۔ صبر کا پیمانہ لبریز ، بڑا مطالبہ کر دیا ، جانتے ہیں کس نے کیا ؟

7  ستمبر‬‮  2016

اسلام آباد(آئی این پی)تحریک انصاف کے مرکزی رہنما و رکن قومی اسمبلی جہانگیر ترین نے پنجاب میں دہشتگردی اور کرپشن کا گٹھ جوڑ توڑنے کیلئے رینجرز آپریشن کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ جب تک کرپشن ختم نہیں ہوگی،دہشتگردی ختم نہیں ہوسکتی،رائیونڈ تشدد کرنے نہیں،احتجاج ریکارڈ کروانے جارہے ہیں،سب سے پہلے پانامہ لیکس کا معاملہ حل کرنے کی ضرورت ہے۔وہ بدھ کو پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے۔انہوں نے کہا کہ رینجرز سندھ میں کرپشن اور دہشتگردی کا گٹھ جوڑ توڑ رہے ہیں،آرمی چیف کے بیان کی تائید کرتے ہیں،جب تک کرپشن ختم نہیں ہوگی،دہشتگردی ختم نہیں ہوسکتی۔انہوں نے کہا کہ پٹواری کوپکڑنے کا کوئی فائدہ نہیں،جب تک بڑے لوگ نہیں پکڑے جائیں گے کرپشن کا خاتمہ نہیں ہوسکتا،شفاف احتساب بے حدضروری ہے،یہی تحریک انصاف کا موقف ہے۔
جہانگیر ترین نے کہا کہ آرمی چیف نے جو بات کی وہ ہر پاکستانی کی دل کی آواز ہے،پانامہ لیکس کا معاملہ سب سے پہلے حل ہونا چاہیے۔انہوں نے کہا کہ ہم نے 126دن کا دھرنا دیا،ایک گملا بھی نہیں ٹوٹا،تحریک انصاف پر امن جماعت ہے،ہم رائیونڈ تشدد کرنے نہیں احتجاج ریکارڈ کرنے جارہے ہیں،جہانگیر ترین نے کہا کہ پنجاب میں دہشتگردی اور کرپشن کو پولیس کی سپورٹ حاصل ہے،نیشنل ایکشن پلان کے تحت پنجاب ہو یا سندھ جہاں بھی رینجرز کی ضرورت ہے بلایا جائے۔

موضوعات:



کالم



مرحوم نذیر ناجی(آخری حصہ)


ہمارے سیاست دان کا سب سے بڑا المیہ ہے یہ اہلیت…

مرحوم نذیر ناجی

نذیر ناجی صاحب کے ساتھ میرا چار ملاقاتوں اور…

گوہر اعجاز اور محسن نقوی

میں یہاں گوہر اعجاز اور محسن نقوی کی کیس سٹڈیز…

نواز شریف کے لیے اب کیا آپشن ہے (آخری حصہ)

میاں نواز شریف کانگریس کی مثال لیں‘ یہ دنیا کی…

نواز شریف کے لیے اب کیا آپشن ہے

بودھ مت کے قدیم لٹریچر کے مطابق مہاتما بودھ نے…

جنرل باجوہ سے مولانا کی ملاقاتیں

میری پچھلے سال جنرل قمر جاوید باجوہ سے متعدد…

گنڈا پور جیسی توپ

ہم تھوڑی دیر کے لیے جنوری 2022ء میں واپس چلے جاتے…

اب ہار مان لیں

خواجہ سعد رفیق دو نسلوں سے سیاست دان ہیں‘ ان…

خودکش حملہ آور

وہ شہری یونیورسٹی تھی اور ایم اے ماس کمیونی کیشن…

برداشت

بات بہت معمولی تھی‘ میں نے انہیں پانچ بجے کا…

کیا ضرورت تھی

میں اتفاق کرتا ہوں عدت میں نکاح کا کیس واقعی نہیں…