انجیکشن لگانے کا طریقہ جانیں

  ہفتہ‬‮ 25 اگست‬‮ 2018  |  10:00
اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) زندگی میں انجیکشن لگوانا کس کو پسند ہوسکتا ہے؟ مگر ایسے مواقع آتے ہیں جب انجیکشن لگانا ضروری ہوتا ہے اور ایسی صورتحال بھی ہوسکتی ہے جب اس کام کے لیے ماہر دستیاب نہ ہو یا گھر میں کسی کو لگانا ہو مگر کسی کو اس کی تربیت نہ ہو۔ تو انجیکشن لگانے کا آسان طریقہ جانیں جو اسے لگانا آسان بنانے کے ساتھ ایمرجنسی میں کسی غلطی سے بچانے میں بھی مدد دے گا۔سب سے پہلے تو یہ ضروری ہے کہ ایسا آپ واقعی کسی ایمرجنسی میں کریں، یعنی خود لگانا مجبوری بن جائے۔ تجویز کردہ دوا کے ساتھ مطلوبہ مقدار والی سرنج کو بھی یقینی بنائیں۔اپنے ہاتھ اچھی طرح دھوئیں۔ ایسی پلیٹ یا ٹرے لیں، جس میں تمام سامان آجائے اور اس کی سطح کو صاف کرلیں۔ مریض کو لیٹنے کے لیے کہیں تاکہ مسلز ریلیکس ہوسکیں۔ گلووز پہن لیں اور پھر روئی کو میڈیکل محلول میں بھگوئیں۔ انجیکشن کیسے لگائیں؟ اگر انجیکشن کی دوا ٹھنڈی ہے تو اسے کچھ گرم کرلیں۔ سرنج کو پیکج میں باہر نکالیں اور شیشے کی بوتل یا امپول کو اوپن کرکے دوا کو سرنج میں بھریں۔ اگر غلطی سے سرنج کی سوئی کو چھولیا ہو تو اسے بدل دیں۔ دوا بھر کر سرنج کی سوئی کو اوپر کریں اور معمولی سی دوا کو باہر نکال دیں تاکہ ہوا بھی نکل جائے۔ کولہے یا کندھے پر انجیکشن کو اوپری حصے میں لگائیں تاکہ نس پر نہ لگے۔ یہ بھی پڑھیں : ایک انجیکشن سے موٹاپے اور ذیابیطس کا علاج ہوگا ممکن؟ انجیکشن لگانے کے بعد جراثیم کش وائپ سے متاثرہ حصے کو صاف کریں۔ انجیکشن میں موجود محلول کو آہستگی سے انجیکٹ کریں تاکہ مریض کو زیادہ تکلیف نہ ہو۔ انجیکشن لگاتے ہوئے سرنج کو آگے پیچھے نہ کریں، ایک ہاتھ سے اسے پکڑ کر دوسرے ہاتھ سے دبانے والے حصے کو کنٹرول کریں۔ ایک سرنج کو دو بار استعمال نہ کریں، لگانے کے بعد اسے تلف کردیں اور پھر ہاتھ دھولیں۔ یہ مضمون عام معلومات کے لیے ہے۔ قارئین اس حوالے سے اپنے معالج سے بھی ضرور مشورہ لیں۔

موضوعات:

loading...