اگر کرکٹر نہ ہوتا تو فیملی بزنس سنبھالتا، کامران اکمل

  منگل‬‮ 7 جون‬‮ 2022  |  14:42

لاہور (این این آئی)قومی کرکٹر کامران اکمل نے کہاہے کہ اگر کرکٹر نہ ہوتا تو فیملی بزنس سنبھالتا، ہمارا لوہے کا کام تھا، وہی کام کررہے ہوتے،ایشیاکپ کے اہم میچ میں میری اپیل پر گوتم سخت غصے میں آگیا،ایشانت شرما کے ساتھ بھی ایسا ہی کچھ ہوا تھا۔

ا یک پروگرام میں میزبان نے طنز کیا کہ آپ کے بارے میں مشہور ہے کہ آپ کو 2 بھارتی کرکٹرز سے کافی محبت ہے؟، یہ بات کتابوں میں آئی ہے کہ آپ گوتم گمبھیر اور ایشانت شرما کیلئے گنگناتے بھی ہیں اور آپ کو ان سے پیار بھی ہے، تو اس کی کیا وجہ ہے؟جواب میں کرکٹر نے واقعہ کی تفصیل بتاتے ہوئے کہا کہ ایشیا کپ کے دوران گوتم کے ساتھ تھوڑی غلط فہمی ہوگئی تھی۔کامران اکمل نے بتایا کہ میچ کے دوران گوتم کریز پر جمع ہوا تھا، میں نے ایک گیند پر پیچھے کیچ پکڑ لیا، مجھے لگا وہ آؤٹ ہے تاہم امپائر نے ناٹ آؤٹ دیا۔کرکٹر نے بتایا کہ میری اپیل پر گوتم سخت غصے میں آگیا۔انہوں نے کہا کہ ایشانت شرما کے ساتھ بھی ایسا ہی کچھ ہوا تھا، اس نے پہلے مجھے گالی دی تھی جس کے بعد میں نے بھی اسے گالی دی۔کامران اکمل نے سوال کے جواب میں کہا کہ اگر کرکٹر نہ ہوتا تو فیملی بزنس سنبھالتا، ہمارا لوہے کا کام تھا، وہی کام کررہے ہوتے۔



زیرو پوائنٹ

چودھری برادران میں پھوٹ کیسے پڑی؟

میں نے مونس الٰہی سے پوچھا ’’خاندان میں اختلافات کہاں سے شروع ہوئے؟‘‘ ان کا جواب تھا’’جائیداد کی تقسیم سے‘ ظہور الٰہی فیملی نے اپنے اثاثے ہمارے بچپن میں آپس میں تقسیم کر لیے تھے صرف لاہور کا گھر رہ گیا تھا‘ یہ گھر ہمارے نانا چودھری ظہور الٰہی نے بنانا شروع کیا تھا لیکن مکمل ہونے سے قبل ہی ....مزید پڑھئے‎

میں نے مونس الٰہی سے پوچھا ’’خاندان میں اختلافات کہاں سے شروع ہوئے؟‘‘ ان کا جواب تھا’’جائیداد کی تقسیم سے‘ ظہور الٰہی فیملی نے اپنے اثاثے ہمارے بچپن میں آپس میں تقسیم کر لیے تھے صرف لاہور کا گھر رہ گیا تھا‘ یہ گھر ہمارے نانا چودھری ظہور الٰہی نے بنانا شروع کیا تھا لیکن مکمل ہونے سے قبل ہی ....مزید پڑھئے‎