ایرانی کرنسی کو تاریخ کا بدترین جھٹکا ڈالر کے مقابلہ میں کم ترین سطح پر پہنچ گئی

  منگل‬‮ 24 جنوری‬‮ 2023  |  15:16

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)ایرانی کرنسی تاریخ کی بدترین بے قدری کا شکار ،ایک ڈالر لاکھوں ایرانی ریال تک جاپہنچا۔ ایران میں مظاہروں اور یورپی یونین کی جانب سے مزید پابندیوں کے خدشے نے ایرانی معیشت(irani economy) کو شدید دھچکا پہنچایا ہے۔نجی ٹی وی ٹوئنٹی فور کے مطابق

ڈالر کے مقابلے میں ایران کی کرنسی تاریخ کی کم ترین سطح پر آگئی ہے۔ اوپن مارکیٹ میں ایک امریکی ڈالر چار لاکھ ستاون ہزار ریال تک پہنچ گیا۔گزشتہ برس شروع ہونے والے مظاہروں کے دوران ایرانی ریال کی قدر میں انتیس فیصد تک کمی واقع ہوئی ہے۔ یاد رہے پاکستان میں بھی روپے کی قدر کم ہورہی ہے جبکہ ڈالر مہنگا ہوتا جارہا ہے ، پیر کے روز انٹربینک میں روپے کے مقابلے میں ڈالر 230 جبکہ اوپن مارکیٹ میں 240 روپے کا ہوگیا۔ گزشتہ روز انٹر بینک میں ڈالر کی قدر 48 پیسے کے اضافے سے 229.67 روپے سے بڑھ کر 23.15 روپے کی سطح پر جاپہنچی۔ پیر کو یورو کی قیمت خرید 3 روپے کے اضافے سے 275 روپے اور برطانوی پاؤنڈ کی قیمت خرید 1 روپیہ بڑھ کر 312 روپے ہوگئی، سعودی ریال کی قیمت خرید 67 روپے اور یو اے ای درہم کی قیمت خرید 69.70 روپے پر مستحکم رہی۔



زیرو پوائنٹ

اب تو آنکھیں کھول لیں

یہ14 جنوری کی رات تھی‘ پشاور کے سربند تھانے پر دستی بم سے حملہ ہو گیا‘ دھماکا ہوا اور پورا علاقہ لرز گیا‘ وائر لیس پر کال چلی اور ڈی ایس پی سردار حسین فوری طور پر تھانے پہنچ گئے‘ ان کے دو محافظ بھی ان کے ساتھ تھے‘یہ لوگ گاڑی سے اترے‘ چند قدم لیے‘ دور سے فائر ہوا‘سردار ....مزید پڑھئے‎

یہ14 جنوری کی رات تھی‘ پشاور کے سربند تھانے پر دستی بم سے حملہ ہو گیا‘ دھماکا ہوا اور پورا علاقہ لرز گیا‘ وائر لیس پر کال چلی اور ڈی ایس پی سردار حسین فوری طور پر تھانے پہنچ گئے‘ ان کے دو محافظ بھی ان کے ساتھ تھے‘یہ لوگ گاڑی سے اترے‘ چند قدم لیے‘ دور سے فائر ہوا‘سردار ....مزید پڑھئے‎