بھارتی کرکٹ ٹیم پاکستان کھیلنے نہ آئی تو ہم بھی بھارت نہیں جائیں گے،رمیز راجہ کا دو ٹوک فیصلہ

  جمعہ‬‮ 25 ‬‮نومبر‬‮ 2022  |  20:09

اسلام آباد(این این آئی) پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین رمیز راجہ نے واضح کر دیا کہ بھارتی کرکٹ ٹیم پاکستان کھیلنے نہ آئی تو ہم بھی بھارت نہیں جائیں گے۔اسلام آباد میں ایک تقریب میں گفتگو کرتے ہوئے رمیز راجہ نے کہا کہ اگر پاکستان آئندہ برس بھارت میں شیڈول ورلڈکپ میں شرکت نہیں کرے گا تو دیکھے گا کون؟۔

خیال رہے کہ ایشین کرکٹ کونسل کے صدر جے شاہ نے رواں برس اکتوبر میں بیان دیا تھا کہ بھارتی کرکٹ ٹیم اگلے سال ہونے والے ایشیا کپ کے لیے پاکستان نہیں جائے گی اور ہوسکتا ہے یہ ٹورنامنٹ کسی نیوٹرل مقام پر منتقل کردیا جائے۔چیئرمین پی سی بی رمیز راجہ نے کہا کہ ہمارا واضح موقف ہے بھارتی ٹیم آئے گی تو ہی ہم ورلڈکپ میں کھیلنے جائیں گے نہ آئی تو پھر ورلڈکپ ہمارے بغیرکروا کے دکھا دیں۔رمیز راجہ نے کہا کہ ہم بھارتی فیصلے پر جارحانہ انداز اپنائیں گے۔ ہماری ٹیم پرفارمنس دِکھا رہی ہے، ہم نے دنیا کے بڑے بزنس بنانے والی کرکٹ ٹیم کو ہرایا ہے، ہم ٹی ٹونٹی ورلڈ کپ کا فائنل کھیل کرآئے ہیں۔چیئرمین پی سی بی رمیز راجہ نے کہا کہ بھارتی کرکٹ بورڈ یا ایشین کرکٹ کونسل سے بھارت کی جانب سے پاکستان میں ایشیاء کپ نہ کھیلنے کے حوالے سے تاحال بات نہیں ہوئی۔میں ہمیشہ سے کہتا تھا کہ ہم نے پاکستان کرکٹ کی معیشت کو بہتر کرنا ہے اور وہ ایک ہی صورت میں ہوگی جب ہماری ٹیم بہتر پرفارم کرے گی، ہم نے 2021ء کے ٹی ٹونٹی ورلڈ کپ میں بھارت کو ہرایا، ایشیاء کپ میں ہم نے بھارت کو ہرایا، ایک سال میں پاکستان کرکٹ ٹیم نے دو مرتبہ بلین ڈالر اکانومی کے بورڈ کو ہرایا ہے۔واضح رہے کہ ایشیا کپ آئندہ برس پاکستان میں شیڈول ہے جو2023ء کے وسط میں کھیلا جائے گا جس کا فارمیٹ ون ڈے رکھا گیا ہے۔ ایشیا کپ کے بعد 2023ء میں بھارت میں ون ڈے کرکٹ کا عالمی کپ شیڈول ہے۔



موضوعات:

زیرو پوائنٹ

بشریٰ بی بی سے شادی

عون چودھری 2010ء سے 2018ء تک سائے کی طرح عمران خان کے ساتھ رہے‘ یہ رات کے وقت انہیں ملنے والے آخری اور صبح ملاقات کے لیے آنے والے پہلے شخص ہوتے تھے چناں چہ یہ عمران خان کی زندگی کے اہم ترین دور کے اہم ترین شاہد ہیں‘ مجھے چند دن قبل عون چودھری نے اپنے گھر پر ناشتے ....مزید پڑھئے‎

عون چودھری 2010ء سے 2018ء تک سائے کی طرح عمران خان کے ساتھ رہے‘ یہ رات کے وقت انہیں ملنے والے آخری اور صبح ملاقات کے لیے آنے والے پہلے شخص ہوتے تھے چناں چہ یہ عمران خان کی زندگی کے اہم ترین دور کے اہم ترین شاہد ہیں‘ مجھے چند دن قبل عون چودھری نے اپنے گھر پر ناشتے ....مزید پڑھئے‎