بدھ‬‮ ، 29 مئی‬‮‬‮ 2024 

پرویز الٰہی کو اعتماد کا ووٹ دینے کا معاملہ آزاد رکن اسمبلی جگنو محسن نے بڑا اعلان کر دیا

29  مارچ‬‮  2022

اوکاڑہ ٗ لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک ٗ آئی این پی )گزشتہ ساڑھے3 سال سے پنجاب اسمبلی میں آزاد حیثیت برقرا ر رکھنے والی حلقہ پی پی184سے آزاد رکن پنجاب اسمبلی جگنو محسن نے عمران خان کے نامزد وزیر اعلیٰ چودھری پرویز الٰہی کو اعتماد کا ووٹ کسی بھی صورت نہ دینے کا فیصلہ کیا ہے۔روزنامہ جنگ میں وارث حیدری کی خبر کے مطابق نئے وزیر اعلیٰ پنجاب کے انتخاب کی صورت

میں وہ میاں نوازشریف کے وزیر اعلیٰ کے نامزد امیدوار کو ووٹ دیں گی۔وزیرا عظم عمران خان کی طرف سے چودھری پرویز الٰہی کو وزیر اعلیٰ پنجاب کا منصب دئیے جانے کے بعد وزیر اعظم کیخلاف قومی اسمبلی میں جمع تحریک عدم اعتماد کے حوالے سے اپوزیشن کی سیاست نے نیا رخ اختیار کر لیا۔ذمہ دار ذرائع نے بتایا کہ پنجاب اسمبلی میں ممکنہ طور پر نئے قائد ایوان کی حیثیت سے اعتماد کا ووٹ لینے کیلئے پنجاب اسمبلی میں موجود آزاد ارکان اسمبلی کی حیثیت بڑھ گئی ہے۔دوسری جانب مسلم لیگ ق کے رہنما اور سپیکر پنجاب اسمبلی چودھر ی پرویز الہی کی بطور وزیر اعلی نامزدگی کے سیاسی درجہ حرارت کافی گرم ہو گیا ۔ بنی گالہ میں ہو نیوالی ملاقات میں وزیر اعظم عمران خان نے چودھری پرویز الہی کو وزیر اعلی نامزد کیا۔اسی دوران عثمان بزدار سے استعفیٰ بھی لیا گیا۔پرویز الہٰی کو کہا گیا کہ اعتماد کے ووٹ والے دن تحریک انصاف آپ کو ووٹ دے گی۔ دوسری جانب پنجاب اسمبلی میں مسلم لیگ ن کے منحرف ارکان نے ق لیگ کے پرویزالہی کی بطور وزارت اعلی پنجاب نامزدگی کی حمایت کا اعلان کر دیا ہے۔

منحرف رکن اشرف انصاری نے کہا ہے کہ تحریک انصاف کی جانب سے پرویز الہی کو وزیراعلیٰ پنجاب نامزد کئے جانے پر وہ ان کا مکمل ساتھ دیں گے او رپرویزالہی کو بطور وزیراعلی پنجاب ووٹ دیں گے ہمارے گروپ کے ارکان کی تعداد 7 ہے جب کہ مزید 15 ن لیگی ارکان پرویز الہی کو ووٹ دیں گے۔رہنما پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی)یونس انصاری نے دعوی کیا کہ پنجاب اسمبلی میں ن لیگ کے 6 ممبران عمران خان کے ساتھ ہیں۔

ایک بیان میں یونس انصاری کا کہنا تھا کہ ان کی قیادت میں ن لیگ کے 6 ارکان آج وزیراعظم سے ملیں گے۔ان کے علاوہ مسلم لیگ ن کے منحرف رکن پنجاب اسمبلی اشرف انصاری کا دعوی ہے کہ ن لیگ سے تعلق رکھنے والے ہمارے گروپ کے ارکان کی تعداد7 ہے، پنجاب کی سیاست میں وزیراعظم کے فیصلے کے ساتھ ہیں، وزیراعظم اگر پرویز الہی کو وزیراعلی نامزد کریں گے تو حمایت کریں گے۔

اشرف انصاری کا کہنا تھا کہ پرویز الہی کے وزیراعلی نامزد ہونے پر ن لیگ کے 15 مزید ارکان ووٹ دیں گے۔خیال رہے کہ وفاقی وزیر اور مسلم لیگ ق کے رہنما مونس الہی کا کہنا تھاکہ وزیراعظم عمران خان سے پرویز الہیٰ کی ملاقات کے دوران وزیراعلی عثمان بزدار سے استعفیٰ لے لیا گیا ہے۔مونس الہٰی کا کہنا ہے کہ حکومت نے چوہدری پرویز الہی کو وزیر اعلی نامزد کردیا ہے اور پرویز الہی نے وزیراعلی پنجاب بننے کی وزیراعظم کی آفر قبول کرلی ہے۔

موضوعات:



کالم



ٹینگ ٹانگ


مجھے چند دن قبل کسی دوست نے لاہور کے ایک پاگل…

ایک نئی طرز کا فراڈ

عرفان صاحب میرے پرانے دوست ہیں‘ یہ کراچی میں…

فرح گوگی بھی لے لیں

میں آپ کو ایک مثال دیتا ہوں‘ فرض کریں آپ ایک بڑے…

آئوٹ آف دی باکس

کان پور بھارتی ریاست اترپردیش کا بڑا نڈسٹریل…

ریاست کو کیا کرنا چاہیے؟

عثمانی بادشاہ سلطان سلیمان کے دور میں ایک بار…

ناکارہ اور مفلوج قوم

پروفیسر سٹیوارٹ (Ralph Randles Stewart) باٹنی میں دنیا…

Javed Chaudhry Today's Column
Javed Chaudhry Today's Column
زندگی کا کھویا ہوا سرا

Read Javed Chaudhry Today’s Column Zero Point ڈاکٹر ہرمن بورہیو…

عمران خان
عمران خان
ضد کے شکار عمران خان

’’ہمارا عمران خان جیت گیا‘ فوج کو اس کے مقابلے…

بھکاریوں کو کیسے بحال کیا جائے؟

’’آپ جاوید چودھری ہیں‘‘ اس نے بڑے جوش سے پوچھا‘…

تعلیم یافتہ لوگ کام یاب کیوں نہیں ہوتے؟

نوجوان انتہائی پڑھا لکھا تھا‘ ہر کلاس میں اول…

کیا یہ کھلا تضاد نہیں؟

فواد حسن فواد پاکستان کے نامور بیوروکریٹ ہیں‘…