خانپور ڈیم افسوسناک حادثہ، نجی اسکول کے طلباء اور اساتذہ کی کشتی الٹ گئی ، کشتی میں 4 ٹیچر ز سمیت 35افراد سوار ، ایک خاتون ٹیچر کی لاش نکالی لی گئی

  منگل‬‮ 25 جنوری‬‮ 2022  |  14:26

ہری پور(این این آئی)خان پور ڈیم میں راولپنڈی سے سیر و تفریح کیلئے آئے سکول کے طلبا کی کشتی ڈوبنے سے ایک ٹیچر جاں بحق اور 4 طلبہ کی حالت تشویشناک ہے، کشتی میں اوور لوڈننگ کی وجہ سے حادثہ رونما ہوا ہے، باقی بچیوں اور ٹیچرز کو بحفاظت نکال لیا گیا ہے۔ اسسٹنٹ کمشنر خان پور نورالحق نے یہاں بتایا کہ راولپنڈی کے علاقہ صادق آباد کے ایک نجی سکول مسلم

انٹرنیشنل پبلک سکول کے طلبا اپنے اساتذہ کے ساتھ خان پور ڈیم گھومنے آئے ہوئے تھے کہ اس دوران ٹیچرز نے طلبہ کو سیر و تفریح کی غرض سے دو کشتیوں میں ڈیم کی سیر کیلئے بٹھایا، کشتیوں میں اساتذہ اور سکول کا دیگر عملہ بھی سوار تھے۔ انہوں نے بتایا کہ ملاح نے کشتی میں اوور لوڈنگ کی جس کی وجہ سے یہ حادثہ رونما ہوا ہے جبکہ خان پور ڈیم میں ان دنوں پانی کا لیول بھی انتہائی کم ہے، تمام سٹاف اور بچوں نے لائف جیکٹس پہن رکھیں تھیں جس وجہ سے کشتی حادثہ میں نقصان کم ہوا ہے، تمام سٹاف اور ٹیچرز کو تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال خان پور پہنچا دیا گیا ہے۔ اطلاع ملتے ہی ریسکیو 1122 کا عملہ موقع پر پہنچ گیا جبکہ مقامی ملاحوں نے بھی ریسکیو آپریشن میں بھرپور حصہ لیا، خاتون ٹیچرکی نعش نکال لی گئی ہے جبکہ ڈیم سے نکالے گئے بچوں میں سے 4 کی حالت تشویشناک ہے۔ ریسکیو حکام اور ٹیموں نے امدادی کام مکمل کر لیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ اطلاع ملتے ہی اسسٹنٹ کمشنر خانپور نورالحق فورا جائے حادثہ پر پہنچ گئے اور امدادی کاموں میں حصہ بھی لیا۔ ڈیم کی سیر کیلئے موجود کشتیوں کو دفعہ 144 کے تحت سفر کی پابندی پر بھی غور جاری ہے۔



زیرو پوائنٹ

کیا مریم نواز خاتون نہیں؟

آج سے چند برس قبل اسلام آباد ائیرپورٹ پر ایک حیران کن واقعہ پیش آیا‘ برطانیہ جانے والی ایک فیملی نے امیگریشن کی فی میل سٹاف سے بدتمیزی کی‘ بدتمیزی کرنے اور بھگتنے والی دونوں خواتین تھیں‘ بات بڑھتے بڑھتے گالی گلوچ اور ہاتھا پائی تک چلی گئی‘ پہلا تھپڑ مسافر خاتون نے مارا‘جواب میں امیگریشن کی خاتون نے بھی ....مزید پڑھئے‎

آج سے چند برس قبل اسلام آباد ائیرپورٹ پر ایک حیران کن واقعہ پیش آیا‘ برطانیہ جانے والی ایک فیملی نے امیگریشن کی فی میل سٹاف سے بدتمیزی کی‘ بدتمیزی کرنے اور بھگتنے والی دونوں خواتین تھیں‘ بات بڑھتے بڑھتے گالی گلوچ اور ہاتھا پائی تک چلی گئی‘ پہلا تھپڑ مسافر خاتون نے مارا‘جواب میں امیگریشن کی خاتون نے بھی ....مزید پڑھئے‎