بنگلہ دیش کی ہوم سیریز میں انہیں آسان نہیں لیا جا سکتا،بابر اعظم

  جمعرات‬‮ 18 ‬‮نومبر‬‮ 2021  |  22:31

ڈھاکہ (آن لائن)پاکستان کرکٹ ٹیم کے کپتان بابر اعظم کا کہنا ہے کہ بنگلا دیش کی ہوم سیریز میں انہیں آسان نہیں لیا جا سکتا، سینئر کھلاڑیوں کے نہ ہونے کے باوجود ٹیم میں جو کھلاڑی شامل ہیں انہیں بنگلا دیش پریمیئر لیگ کھیلنے کا تجربہ ہے اس لیے ہم سیریز میں اعتماد کے ساتھ کھیلیں گے۔بابر اعظم نے کہا ہے کہ اس وقت پاکستان ٹیم کا اچھا مومنٹم بنا ہوا ہے اور اسی کو برقرار رکھنے کی کوشش کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ سیمی فائنل میں ہارنے کا دکھ ہے، ہر کسی کو افسوس ہوا ہے، اس لیے تمام کھلاڑیوں کو بیک کیا ہے، انہیں اعتماد دیا ہے اس لیے مومنٹم کو برقرار رکھ رہے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ بنگلادیش اور ویسٹ انڈیز کے خلاف ہمارے 6 میچز ہیں، ان میچز میں مختلف کمبی نیشن آزمائیں گے، ڈھاکا میں سیریز کی تیاری کا جتنا موقع ملا ہے اس سے فائدہ اٹھانے کی کوشش کریں گے۔کپتان نے کہا کہ ہماری کوشش یہی ہے کہ ورلڈ کپ کی طرح یہاں بھی اچھا کھیلیں، یہاں کنڈیشنز مختلف ہوتی ہیں، ویسے رنز نہیں بنیں گے جیسے یو اے ای میں بنتے رہے ہیں، یہاں وکٹ پر ٹھہرنا ہو گا، اسی سے فائدہ ہو گا۔بابر اعظم نے کہا کہ کوویڈ 19 کی وجہ سے فینز گراونڈ میں نہیں آسکتے تھے لیکن اب یہاں انہیں اسٹیڈیم میں آنے کی اجازت ملی ہے جو خوش آئند ہے۔انہوں نے کہاکہ بنگلا دیش کی ٹیم کی سپورٹ کے ساتھ ہمیں بھی فینز کی یہاں سپورٹ ملتی ہے،ہم جب اسٹیڈیم آتے ہیں تو راستے میں ہمیں لوگ چیئر کرتے ہیں۔آئندہ ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں کیسا کمبی نیشن ہوگا، کیا محمد حفیظ اور شعیب ملک ٹیم میں شامل رہیں گے، اس سوال کے جواب میں بابر اعظم نے کہا کہ آسٹریلیا کس ٹیم کے ساتھ جائیں گے ابھی کچھ کہنا جلد ہو گاان کاکہنا تھا کہ وطن واپس پہنچنے پر سلیکٹرز اور دیگر افراد کے ساتھ مل بیٹھیں گے اور پلان تیار کریں گے اس وقت ہمارا فوکس سیریز ٹو سیریز ہے تمام کھلاڑیوں کے مائنڈ کلیئر ہیں، ہر کوئی اپنے رول کے مطابق کھیل رہا ہے۔واضح رہے کہ پاکستان اور بنگلا دیش کی ٹیموں کے درمیان تین ٹی ٹوئنٹی میچز کی سیریز کا پہلا میچ کل شیر بنگلا نیشنل کرکٹ اسٹیڈیم میر پور میں کھیلا جائے گا۔



موضوعات:

زیرو پوائنٹ

سانو۔۔ کی

سانو ۔۔کی پنجابی زبان کا ایک محاورہ یا ایکسپریشن ہے‘ اس کا مطلب ہوتا ہے ہمیں کیا فرق پڑتا ہے‘ ہمارے باپ کا کیا جاتا ہے‘ ہمارا کیا نقصان ہے یاپھر آئی ڈونٹ کیئر‘ ہم پنجابی لوگ اوپر سے لے کر نیچے تک اوسطاً دن میں تیس چالیس مرتبہ یہ فقرہ ضرور دہراتے ہیں لہٰذا اس کثرت استعمال کی وجہ ....مزید پڑھئے‎

سانو ۔۔کی پنجابی زبان کا ایک محاورہ یا ایکسپریشن ہے‘ اس کا مطلب ہوتا ہے ہمیں کیا فرق پڑتا ہے‘ ہمارے باپ کا کیا جاتا ہے‘ ہمارا کیا نقصان ہے یاپھر آئی ڈونٹ کیئر‘ ہم پنجابی لوگ اوپر سے لے کر نیچے تک اوسطاً دن میں تیس چالیس مرتبہ یہ فقرہ ضرور دہراتے ہیں لہٰذا اس کثرت استعمال کی وجہ ....مزید پڑھئے‎