ایک اور ٹرین خوفناک حادثے سے بال بال بچ گئی

  اتوار‬‮ 13 جون‬‮ 2021  |  16:47

لاہور/لیاقت پور(این این آئی) کلپ ٹوٹنے پانچ بوگیاں مال بردار ٹرین سے الگ ہو کر پیچھے رہ گئیں ۔ تفصیلات کے مطابق لیاقت چک نمبر 20 کے قریب مال بردار ٹرین کی 5بوگیاں ٹرین سے الگ ہوگئیں،بوگیاں کلپ ٹوٹنے کے باعث الگ ہوئیں۔ بتایاگیا ہے کہ مال بردار ٹرین اپ ٹریک پرجارہی تھی کہ اچانک کلپ ٹوٹ گیا،مال بردار ٹرین کو آدھے گھنٹے بعد جوائنٹ کرکے منزل کی جانب روانہ کردیا گیا۔دوسری جانب فیڈرل گورنمنٹ انسپکٹر آف ریلویز فرخ تیمور غلزئی ملت ایکسپریس اور سرسید ایکسپریس کے حادثے کے حوالے سے ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ آفس سکھر میں 16جون سے تین روزتک


انکوائری کریں گے ،جبکہ ریلوے ترجمان نے کہا ہے کہ حتمی رپورٹ تین سے چار ہفتے میں مرتب کرلی جائے گی جس کے بعد ذمہ داروں کو سزا دی جائے گی ۔ ریلوے ترجمان کے مطابق ایف جی آئی آر فرخ تیمور غلزئی 16،17 اور 18 جون کو ڈویژنل سپرنٹنڈنٹ آفس سکھر میں انکوائری کریں گے۔ ترجمان کے مطابق اگر کوئی شخص ملت ایکسپریس اور سرسید ایکسپریس کے ایکسیڈنٹ / ڈی ریلمنٹ کے حوالے سے کوئی گواہی یا ثبوت دینا چاہتا ہے تو اوپر دی گئی تاریخوں میں ڈویژنل سپرنٹنڈنٹ آفس سکھر میں حاضر ہوکر دے سکتاہے یا اس حوالے سے کوئی بھی اطلاع لکھ کر بھی 28 جون 2021 تک فیڈرل گورنمنٹ انسپکٹر آف ریلویز کے دفتر علامہ اقبال روڈ لاہور پہنچائی جاسکتی ہے تاکہ حادثے کی وجوہات اور حقائق تک پہنچا جاسکے۔ علاوہ ازیںریلوے ترجمان کے مطابق ڈہرکی ٹرین حادثہ کی حتمی رپورٹ مرتب ہونے میں تین سے چار ہفتے کا وقت درکار ہیں،حتمی رپورٹ کے بعد ذمہ داروں کو سزا دی جائے گی۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

صرف پانچ ہزار روپے کے لیے

لاہور میں 23 جون 2021ء کی صبح 11 بج کر8 منٹ پر جوہر ٹائون میں ایک خوف ناک کار بم دھماکا ہوا تھا‘ دھماکے میں تین افراد جاں بحق اور 22 زخمی ہوئے جب کہ 12 گاڑیاں اور7 عمارتیں تباہ ہو گئی تھیں‘ بم کا اصل ہدف لشکر طیبہ کے لیڈر حافظ سعید تھے‘ یہ دھماکے سے چند گلیوں کے ....مزید پڑھئے‎

لاہور میں 23 جون 2021ء کی صبح 11 بج کر8 منٹ پر جوہر ٹائون میں ایک خوف ناک کار بم دھماکا ہوا تھا‘ دھماکے میں تین افراد جاں بحق اور 22 زخمی ہوئے جب کہ 12 گاڑیاں اور7 عمارتیں تباہ ہو گئی تھیں‘ بم کا اصل ہدف لشکر طیبہ کے لیڈر حافظ سعید تھے‘ یہ دھماکے سے چند گلیوں کے ....مزید پڑھئے‎