یوم آزادی کے موقع پر    184 شخصیات کیلئے سول ایوارڈز کا اعلان

  جمعہ‬‮ 14 اگست‬‮ 2020  |  17:30

اسلام آباد(آن لائن) یوم آزادی کے موقع حکومت پاکستان نے مرحوم صادقین، احمد فراز، ڈاکٹر جمیل جالبی اور مولانا طارق جمیل سمیت مختلف شعبہ ہائے زندگی میں نمایاں خدمات انجام دینے والی184 شخصیات کیلئے سول ایوارڈز کا اعلان  کیا گیا ہے ۔سول ایوارڈز کی تقریب یو م آزادی کے موقع پر جمعہ کو ایوان صدر  اسلام آباد  میں ہوئی  جہاں  چوبیس شخصیات کو ستارہ شجاعت، ستائیس شخصیات کوستارہ امتیاز اور چوالیس شخصیات کیلئے صدارتی تمغہ حسن کارکردگی کا اعلان کیا گیا۔سول ایوارڈز اپنے شعبوں میں بہترین خدمات انجام دینے والے ملکی وغیرملکی شخصیات کودیئے جائیں گے۔ایوانِ صدر میں منعقد تقریب


میں معروف شاعر احمد فراز اورعظیم صوفی گلوکارہ عابدہ پروین کیلئے نشان امتیاز کا اعلان کیا گیا۔ نشانِ امتیاز حاصل کرنے والی دیگر شخصیات میں شہرہ آفاق مصور اور خطاط صادقین نقوی، معروف مصور پروفیسر شاکر علی، مصور اور مجسمہ ساز مرحوم ظہورالحق اور ممتاز ادیب جمیل جالبی شامل ہیں۔ہم نیٹ ورک کی صدر سلطانہ صدیقی کیلئے ستارہ امتیاز، علی بابا  کے جیک ما کو ہلال قائد اعظم دینے کا اعلان کیا گیا۔بشری انصاری اور طلعت حسین کیلئے بھی ستارہ امتیاز کا اعلان کیا گیا ہے۔ فاروق قیصر، نعیم بخاری اور مرحوم عبدالقادر کیلئے بھی ستارہ امتیاز جب کہ سکینہ سموں اور نعمت سرحدی کو پرائیڈ آف پرفارمنس دینے کا اعلان کیا گیا ہے۔مشکلات کے باوجود جرات و بہادری کا مظاہرہ کرنے پر پنجاب سے تعلق رکھنے والے جواد قمر، خیبر پختونخوا سے تعلق رکھنے والی محترمہ صفیہ شہید، خیبر پختونخوا سے ہی تعلق رکھنے والے ممتاز داوڑ، سپاہی اختر خان شہید، ڈاکٹر محمد آصف شہید اور کورونا کے خلاف خدمات سرانجام دیتے ہوئے اپنی جان کا نذرانہ دینے والے گلگت بلتستان کے ڈاکٹر اسامہ ریاض شہید سمیت چوبیس شخصیات کے لیے تمغہ شجاعت کا اعلان کیا گیا۔ہمایوں سعید، علی ظفر اور مہہ جبین قزلباش کیلئے بھی پرائیڈ آف پرفارمنس کا اعلان کیا گیا ہے۔ ان شخصیات کو ایوارڈ 23 مارچ کو دیے جائیں گے


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

بالا مستری

ہم اگر حضرت عمر فاروقؓ کی شخصیت کو دو لفظوں میں بیان کرنا چاہیں تو ”عدل فاروقی“ لکھ دینا کافی ہو گا‘ حضرت عمرؓ انصاف کے معاملے میں انقلابی تھے‘ یہ عدل کرتے وقت شریعت سے بھی گنجائش نکال لیتے تھے مثلاً حجاز اور شام میں قحط پڑا‘ لوگوں نے بھوک سے تنگ آ کر خوراک چوری کرنا ....مزید پڑھئے‎

ہم اگر حضرت عمر فاروقؓ کی شخصیت کو دو لفظوں میں بیان کرنا چاہیں تو ”عدل فاروقی“ لکھ دینا کافی ہو گا‘ حضرت عمرؓ انصاف کے معاملے میں انقلابی تھے‘ یہ عدل کرتے وقت شریعت سے بھی گنجائش نکال لیتے تھے مثلاً حجاز اور شام میں قحط پڑا‘ لوگوں نے بھوک سے تنگ آ کر خوراک چوری کرنا ....مزید پڑھئے‎