ڈان لیکس میں غداری کا سرٹیفکیٹ بانٹا گیا،آج فیصلہ کر لیں کہ غدار کون ہے،جہانگیر ترین نے نواز شریف اور مریم نواز کی سزا کے متعلق کیا بات کی؟لیگی رہنما کی دھماکہ خیز باتیں

  بدھ‬‮ 10 جون‬‮ 2020  |  20:37

اسلام آباد (این این آئی) مسلم لیگ (ن) کے رکن اسمبلی میاں جاوید لطیف نے کہا ہے کہ ڈان لیکس میں غداری کا سرٹیفکیٹ بانٹا گیا،آج فیصلہ کر لیں کہ غدار کون ہے، ایران میں بیٹھ کر دخل اندازی تسلیم کرنا اور ڈیورنڈ لائن کو عارضی سرحد تسلیم کرنا غداری نہیں ہے؟۔

بدھ کو قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ یہ واحد حکومت ہے جس نے اپوزیشن میں ہوتے جو الزامات لگائے تھے،وہی آج بھی لگا رہی ہے،چینی رپورٹ میں جو ہوا وہ سب کے سامنے ہے،یوٹیلیٹی سٹور جس وزارت کے ماتحت ہے وہ وزیر اعظم کے پاس ہے،رمضان المبارک کے لئے انتہائی مہنگی چینی خریدی گئی،کیا حکومت رپورٹ رپورٹ کھیلتے رہے گی۔ انہوں نے کہاکہ آج فیصلہ کر لیں کہ غدار کون ہے،ڈان لیکس میں غداری کا سرٹیفکیٹ بانٹا گیا۔ انہوں نے کہاکہ ایران میں بیٹھ کر دخل اندازی تسلیم کرنا اور ڈیورنڈ لائن کو عارضی سرحد تسلیم کرنا غداری نہیں ہے؟۔ انہوں نے کہاکہ ایٹمی قوت کی بنیاد رکھنے، ایٹم بم بنانے والے اور ایٹمی دھماکہ کرنے والے کو غدار قرار دیا گیا،وزیر ریلوے اس بارے میں جو کہتے ہیں وہ افسوسناک ہے۔ انہوں نے کہاکہ جہانگیر ترین نے کہا کہ نواز شریف اور مریم نواز کی سزا کو بیلنس کرنے کے لئے انہیں سزا دی گئی۔میاں جاوید لطیف نے کہاکہ بطور پاکستانی مجبور ہوکر کہنے لگا ہوں کہ ہمارا وجود خطرے میں ہے،ایک دوسرے کی حیثیت کو قبول کرلیں ادارے اپنی حدود میں رہ جائیں تو ہم مضبوط ہونگے،خدا کے لیے ہوش کریں کہیں ایسا نہ ہو کہ پاکستان ہمارے ہاتھ سے نکل جائے گا۔



موضوعات:

زیرو پوائنٹ

چودھری برادران میں پھوٹ کیسے پڑی؟

میں نے مونس الٰہی سے پوچھا ’’خاندان میں اختلافات کہاں سے شروع ہوئے؟‘‘ ان کا جواب تھا’’جائیداد کی تقسیم سے‘ ظہور الٰہی فیملی نے اپنے اثاثے ہمارے بچپن میں آپس میں تقسیم کر لیے تھے صرف لاہور کا گھر رہ گیا تھا‘ یہ گھر ہمارے نانا چودھری ظہور الٰہی نے بنانا شروع کیا تھا لیکن مکمل ہونے سے قبل ہی ....مزید پڑھئے‎

میں نے مونس الٰہی سے پوچھا ’’خاندان میں اختلافات کہاں سے شروع ہوئے؟‘‘ ان کا جواب تھا’’جائیداد کی تقسیم سے‘ ظہور الٰہی فیملی نے اپنے اثاثے ہمارے بچپن میں آپس میں تقسیم کر لیے تھے صرف لاہور کا گھر رہ گیا تھا‘ یہ گھر ہمارے نانا چودھری ظہور الٰہی نے بنانا شروع کیا تھا لیکن مکمل ہونے سے قبل ہی ....مزید پڑھئے‎