پاکستان کا وہ دو اشخاص جنہوں نے پانامہ جے آئی ٹی رپورٹ سے تین ماہ قبل نواز حکومت جانے کی پیش گوئی کر دی تھی

14  جولائی  2017

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)9اپریل کو نجی ٹی وی پروگرام میں پاکستان کے معروف ترین نجومی اور ستارہ شناس عبداللہ شوکت المعروف ماموں کی کئی گئی پیش گوئی جو 10جولائی پانامہ جے آئی ٹی رپورٹ کے بعد حرف بہ حرف سچ ثابت ہوئی۔ معروف نجومی و ستارہ شناس عبداللہ شوکت المعروف ماموں نے 9اپریل کو نجی ٹی وی ایکسپریس نیوز کے پروگرام’’ٹو دی پوائنٹ میں ‘‘

پیش گوئی کرتے ہوئے ملک پاکستان کے زائچہ کے حوالے سے بتایا تھا کہ2016سے برج قوس میں سیارہ زحل رپیٹ ہوا ہے اور جب بھی یہ رپیٹ ہو تو پاکستان کے حوالے سے یہ اچھی خبر نہیں ۔ ماموں نے اس وقت بات کرتے ہوئے بتایا تھا کہ ماہ اپریل کے وسط کے بعد اس کے سامنے سیارہ مریخ بھی وارد ہو جائے گا اور جب بھی برج قوس میں سیارہ زحل رپیٹ ہوا ہے تو اس نے پاکستان کے حالات میں انتشار اور ابتری پیدا کی ہے اور سیارہ مریخ کے سامنے آ جانے کے بعد ملک کے سیاسی حالات میں ابتری پیدا ہونا شروع ہو جائے گی۔پروگرام میں موجودپاکستان کی صف اول کی ہی ایک اور آسٹروپامسٹ سامعہ خان کے مطابق 9مئی کے بعد پاکستان میں حالات سنگین ہوتے نظر آتے ہیں تاہم انہوں نے مارچ 2017کی 21تاریخ کے بعد بین الاقوامی طاقتوں اور پڑوسی ممالک کے ساتھ پاکستان کے تعلقات کو خوشگوار راہ پر گامزن ہونے کی پیش گوئی بھی کی تھی۔پروگرام میں شریک تیسرے ماہر علم نجوم آغا بہشتی نے آئندہ تین ماہ کے حوالے پیش گوئی کرتے ہوئے کہا تھا کہ آنے والے دن عوام اور ملک کیلئے تو بہتر نظر آتے ہیں تاہم حکومت اور حکمران شدید مشکلات میں نظر آرہے ہیں اور ان کے خلاف تحریک شروع ہونے کا بھی اندیشہ ہے۔پروگرام میں شریک تیسرے ماہر علم نجوم آغا بہشتی نے آئندہ تین ماہ کے حوالے پیش گوئی کرتے ہوئے کہا تھا کہ آنے والے دن عوام اور ملک کیلئے تو بہتر نظر آتے ہیں تاہم حکومت اور حکمران شدید مشکلات میں نظر آرہے ہیں اور ان کے خلاف تحریک شروع ہونے کا بھی اندیشہ ہے۔

موضوعات:



کالم



مرحوم نذیر ناجی(آخری حصہ)


ہمارے سیاست دان کا سب سے بڑا المیہ ہے یہ اہلیت…

مرحوم نذیر ناجی

نذیر ناجی صاحب کے ساتھ میرا چار ملاقاتوں اور…

گوہر اعجاز اور محسن نقوی

میں یہاں گوہر اعجاز اور محسن نقوی کی کیس سٹڈیز…

نواز شریف کے لیے اب کیا آپشن ہے (آخری حصہ)

میاں نواز شریف کانگریس کی مثال لیں‘ یہ دنیا کی…

نواز شریف کے لیے اب کیا آپشن ہے

بودھ مت کے قدیم لٹریچر کے مطابق مہاتما بودھ نے…

جنرل باجوہ سے مولانا کی ملاقاتیں

میری پچھلے سال جنرل قمر جاوید باجوہ سے متعدد…

گنڈا پور جیسی توپ

ہم تھوڑی دیر کے لیے جنوری 2022ء میں واپس چلے جاتے…

اب ہار مان لیں

خواجہ سعد رفیق دو نسلوں سے سیاست دان ہیں‘ ان…

خودکش حملہ آور

وہ شہری یونیورسٹی تھی اور ایم اے ماس کمیونی کیشن…

برداشت

بات بہت معمولی تھی‘ میں نے انہیں پانچ بجے کا…

کیا ضرورت تھی

میں اتفاق کرتا ہوں عدت میں نکاح کا کیس واقعی نہیں…