25اکتوبر سے تمام تعلیمی ادارے3ہفتوںکیلئے بندہونے کی خبریں پنجاب حکومت نے اہم اعلان کردیا

  بدھ‬‮ 21 اکتوبر‬‮ 2020  |  14:16

لاہور، اسلام آباد(این این آئی، آن لائن،مانیٹرنگ ڈیسک )سکول ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ اورمحکمہ صحت پنجاب نے دوبارہ سکول بند کرنے کے حوالے سے سوشل میڈیا پر گردش کرنے والی خبروں کو بے بنیاد قرار دیدیا ۔محکمہ صحت پنجاب حکام کے مطابق کورونا کےمریضوں کی تعداد کا تعین کرنے کے لئے سکولوں میں کورونا ٹیسٹ کی تعداد بڑھا دی گئی ہے۔دوسری جانب صوبائی وزیرتعلیم مراد راس کا کہنا ہے کہ تمام تعلیمی ادارے معمول کے مطابق کھلے رہیں گے،تعلیمی اداروں کی بندش سے متعلق خبروں میں کوئی صداقت نہیں۔سیکرٹری صحت کیپٹن (ر) محمد عثمان کا کہنا ہے کہ معلومات کی تصدیق کے


لیے ہیلپ لائن 1033پر کال یا ان باکس کریں۔یا درہے کہ نجی ٹی وی 92نیوز پر بریکنگ نیوز چلی تھی کہ 25اکتوبر سے تمام تعلیمی اداروں کو دوبارہ 21دن کیلئے بند کرنے کا نوٹیفکیشن جاری کردیا گیا ہے ۔ دریں اثناوفاقی وزیر اسد عمر کی زیرصدارت این سی او سی کا ہنگامی اجلاس منعقد ہوا ۔ اجلاس میں ملک میں کورونا وائرس کے پھیلاو پر تشویش کا اظہار کیا گیا ۔ اجلاس میں ایس او پیز کی خلاف ورزی پر بھی این سی او سی کی تشویش کا اظہار کیا گیا ۔ اجلاس میں این سی او سی نے تنبیہ کی کہ ایس او پیز پر عدم عملدرآمد کی صورت میں سخت پابندیاں دوبارہ لگ سکتی ہیں۔وفاقی وزیر اسد عمر نے کہا کہ ملک بھر میں ایس او پیز کی شدید خلاف ورزیوں کے نتیجے میں کورونا کیسز بے تحاشا بڑھے ہیں اور اگر ایس او پیز پر عملدرآمد نہ کیا گیا تو سروسز دوبارہ بند کریں گے۔ اسد عمر نے تمام چیف سیکرٹریز کو صوبوں میں ایس او پیز پر عملدرآمد یقینی بنانے کی ہدایت کی ۔اسد عمر نے کہا کہ کورونا وائرس کے کیسز کے ساتھ ہلاکتوں کی تعداد میں بھی اضافہ ہورہا ہے۔تمام صوبے ایس او پیز کی خلاف ورزیوں پر سخت ایکشن لے کر بھاری جرمانے عائد کریں۔ٹرانسپورٹ،مارکیٹس، شادی ہالز اور ریسٹورنٹس کی مانیٹرنگ سخت کی جائے۔عوامی مقامات اوراجتماعات کی مانیٹرنگ بھی سخت کی جائے ۔ان ہائی رسک شعبوں سے کورونا وبا تیزی سے پھیل رہی ہے۔ ماسک پہننا اور سماجی فاصلے پر عملدرآمد یقینی بنایا جائے۔خلاف ورزی کرنیوالوں کے خلاف سخت انتظامی کارروائی کی بھی ہدایت کی گئی ۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

بڑے چودھری صاحب

انیس سو ساٹھ کی دہائی میں سیالکوٹ میں ایک نوجوان وکیل تھا‘ امریکا سے پڑھ کر آیا تھا‘ ذہنی اور جسمانی لحاظ سے مضبوط تھا‘ آواز میں گھن گرج بھی تھی اور حس مزاح بھی آسمان کو چھوتی تھی‘ یہ بہت جلد کچہری میں چھا گیا‘ وکیلوں کے ساتھ ساتھ جج بھی اس کے گرویدا ہو گئے‘ اس ....مزید پڑھئے‎

انیس سو ساٹھ کی دہائی میں سیالکوٹ میں ایک نوجوان وکیل تھا‘ امریکا سے پڑھ کر آیا تھا‘ ذہنی اور جسمانی لحاظ سے مضبوط تھا‘ آواز میں گھن گرج بھی تھی اور حس مزاح بھی آسمان کو چھوتی تھی‘ یہ بہت جلد کچہری میں چھا گیا‘ وکیلوں کے ساتھ ساتھ جج بھی اس کے گرویدا ہو گئے‘ اس ....مزید پڑھئے‎