چیف جسٹس کو فارغ کرنے کیلئے کس کونوٹوں کے بریف کیس دیکر بھیجاگیا؟ تاثریہ ہے طاقتور اور کمزور کیلئے الگ الگ قانون ہے، عدلیہ اپنا اعتماد بحال کر ے، عمران خان  کے انکشافات،بڑا مطالبہ کردیا

  پیر‬‮ 18 ‬‮نومبر‬‮ 2019  |  19:46

اسلام آباد (این این آئی) وزیر اعظم عمران خان نے کہاہے کہ تاثریہ ہے کہ طاقتور اور کمزور کیلئے الگ الگ قانون ہے، عدلیہ اپنا اعتماد بحال کرے۔وہ پیر کو ہزارہ موٹر وے کی افتتاحی تقریب سے خطاب کررہے تھے۔ وزیر اعظم نے کہاکہ ملکی نظام عدل کاتاثر یہی ہے کہ یہاں طاقتور کے لیے ایک قانون ہے اور کمزور کے لیے دوسرا، عدلیہ عوام میں اپنا اعتماد بحال کرے، چیف جسٹس کھوسہ اور ان کے بعد آنے والے جسٹس گلزار ملک کو انصاف دے کر آزاد کریں۔ انہوں نے کہاکہ ماضی میں ایک چیف جسٹس کو فارغ کرنے کے لیئے


دوسرے جج کو نوٹوں کے بریف کیس دے کر بھیجا گیا۔ سیاسی مخالفین کو سزائیں دلوانے کیلئے فون پر فیصلے لکھوائے گئے۔انہوں نے کہا کہ حکومت سے جو مدد چاہیے حکومت تیار ہے لیکن اس ملک میں عدلیہ نے عوام کا ااعتماد بحال کرنا ہے کہ یہاں سب کیلئے ایک قانون ہے۔وزیر اعظم نے کہاکہ حضرت علی رضی اللہ عنہ کا قول ہے کہ کفر کا نظام چل جائے گا مگر نا انصافی کا نہیں۔انہوں نے کہاکہ میں عدلیہ سے گزارش ہے کہ عوام کا بھروسہ بحال کریں کہ یہاں سب کیلئے ایک قانون ہے۔

موضوعات:

loading...