کرونا بھی ایک مخلوق ہے جسے جینے کا پورا حق ہے، بھارتی رہنما کی منطق

  پیر‬‮ 17 مئی‬‮‬‮ 2021  |  10:50

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک )بھارتیہ جنتا پارٹی سے تعلق رکھنے والے رہنما راوت نے ایک مقامی ٹی وی چینل سے بات چیت میں کہا کہ وائرس ایک جیتی جاگتی مخلوق ہے اور اسے جینے کا حق حاصل ہے۔ ان کا کہنا تھا،فلسفیانہ زاویے سے دیکھا جائے، تو کورونا وائرس ایک زندہ مخلوق ہےاور اسے بھی جینے کا اتنا ہی حق حاصل ہے، جیسا کسی دوسری مخلوق کو۔ مگر ہم (انسانوں) کو لگتا کہ ہم بہت ذہنی ہیں اور ہم اسے ختم کرنے نکل پڑتے ہیں۔ڈوئچے ویلے کی رپورٹ کےمطابق اس لیے وائرس کو (زندہ رہنے کے لیے) مسلسل اپنی شکل بندلنا


پڑتی ہے۔‘‘ راوت کا یہ بیان ایک ایسے موقع پر سامنے آیا ہے، جب بھارت کورونا وائرس کے نئے انفیکشنز کے اعتبار سے دنیا میں سب سے آگے ہے۔ بھارت میں گزشتہ کئی روز سے روازنہ کی بنیاد پر لاکھوں افراد کورونا وائرس کا شکار ہو رہے ہیں، جب کہ وہاں یومیہ ہلاکتیں بھی ہزاروں ميں دیکھی جا رہی ہے۔ بھارت ميں گزشتہ چوبيس گھنٹوں کے دوران کورونا کے کيسز ميں 343, 144 کا اضافہ ديکھا گيا اور اب متاثرين کی مجموعی تعداد چوبيس ملين سے تجاوز کر گئی ہے۔ مسلسل تيسرے دن چار ہزار سے زائد اموات بھی ريکارڈ کی گئيں، جس کے بعد ہلاک ہونے والوں کی تعداد 262, 317 ہو گئی ہے۔ بھارت ميں پائی جانے والی کووڈ کی قسم اب آٹھ ممالک تک پھيل چکی ہے۔ واضح رہے کہ دنيا بھر ميں کورونا کی وجہ سے اب تک 3.34 ملين افراد ہلاک ہو چکے ہيں۔ راوت کے اس بیان پر سوشل میڈیا پر زبردست بحث جاری ہے جب کہ انہیں مختلف جملوں کے ذریعے ٹرول کیا جا رہا ہے۔


زیرو پوائنٹ

پہلے جنم کے پانچ ساتھی

میں نے چند برس قبل حیات بعد ازمرگ پر کالم لکھا تھا‘ وہ عام سی فضول تحریر تھی‘ لوگوں نے اسے یاوہ گوئی سمجھ کر اگنور کر دیا لیکن وہ پڑھ کر میڈیکل کالج کی ایک سٹوڈنٹ نے مجھ سے رابطہ کیا اور بتایا ’’مجھے بچپن سے خواب آتے ہیں‘ میرا بڑا سا گھر ‘ ایک جوان بیٹا اور بہو ....مزید پڑھئے‎

میں نے چند برس قبل حیات بعد ازمرگ پر کالم لکھا تھا‘ وہ عام سی فضول تحریر تھی‘ لوگوں نے اسے یاوہ گوئی سمجھ کر اگنور کر دیا لیکن وہ پڑھ کر میڈیکل کالج کی ایک سٹوڈنٹ نے مجھ سے رابطہ کیا اور بتایا ’’مجھے بچپن سے خواب آتے ہیں‘ میرا بڑا سا گھر ‘ ایک جوان بیٹا اور بہو ....مزید پڑھئے‎