امارات کا یکطرفہ طور پر اسرائیل کو تسلیم کرنا اور سعودی عرب کے امن فارمولے سے باہر نکلنا تشویشناک قرار

  ہفتہ‬‮ 15 اگست‬‮ 2020  |  23:56

انقرہ (این این آئی )ترکی نے متحدہ عرب امارات کے اسرائیل کے ساتھ دوستانہ مراسم کے قیام کے اعلان پر کڑی تنقید کی ہے اورکہاہے کہ متحدہ عرب امارات کا اسرائیل سے دوستی معاہدہ فلسطینی قوم کے ساتھ خیانت ہے اور اس خیانت پر تاریخ امارات کو معاف نہیں کرے گی۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق ترک وزارت خارجہ کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا کہ ترکی فلسطینی قوم کے ساتھ کھڑا ہے اور امارات کے اسرائیل کے حوالے سے فلسطینی قیادت کی طرف سے اختیار کردہ جرات مندانہموقف کی تائید کرتا ہے۔بیان میں کہا گیا کہ امارات


کا یک طرفہ طور پر اسرائیل کو تسلیم کرنا اور سنہ 2002 میں سعودی عرب کی طرف سے پیش کردہ امن فارمولے سے باہر نکلنا باعث تشویش ہے۔بیان میں کہا گیا کہ متحدہ عرب امارات اپنے خفیہ مقاصد کے حصول اور امریکا کی جانب سے فلسطینیوں کے حقوق کی نفی پرمبنی منصوبے کو آگے بڑھانے کے لیے اسرائیل کے ساتھ کھڑا ہوگیا ہے۔بیان میں کہا گیا کہ ترکی فلسطینی قوم کے حق خود ارادیت کی مکمل حمایت جاری رکھے گا۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

ہم قدم ارطغرل کے مزار پر

عاطف نواز راولپنڈی کی مکہ مارکیٹ میں دوپٹوں کا کام کرتا ہے‘ پندرہ سال کی عمر میں کام شروع کیا اور آہستہ آہستہ اس کام کا ماہر ہوتا چلا گیا‘ پندرہ سال قبل والد جگر کے عارضے کا شکار ہو گیا‘ انہیں ہیپاٹائیٹس سی ہوا اور وائرس آہستہ آہستہ ان کا جگر کھانے لگا‘ عاطف نے یہ 15 ....مزید پڑھئے‎

عاطف نواز راولپنڈی کی مکہ مارکیٹ میں دوپٹوں کا کام کرتا ہے‘ پندرہ سال کی عمر میں کام شروع کیا اور آہستہ آہستہ اس کام کا ماہر ہوتا چلا گیا‘ پندرہ سال قبل والد جگر کے عارضے کا شکار ہو گیا‘ انہیں ہیپاٹائیٹس سی ہوا اور وائرس آہستہ آہستہ ان کا جگر کھانے لگا‘ عاطف نے یہ 15 ....مزید پڑھئے‎