سانحہ بیروت، ڈچ سفیر کی اہلیہ کی موت نے دو افراد کو زندگی بخش دی

  جمعرات‬‮ 13 اگست‬‮ 2020  |  0:04

بیروت (این این آئی) لبنان کے دارالحکومت بیروت میں ہونے والے سانحہ میں ہلاک ہونے والی ڈچ سفیر جان والٹ مینس کی اہلیہ 55 سالہ ہیڈ وِگ وٹمس مولر اپنی موت سے دو افراد کی زندگی بچانے میں مدد کی ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق مرنے سے پہلے ڈچ سفیر کی اہلیہ نے اپنے گردے عطیہ کرنے کی وصیت کی تھی اور کہا تھا کہ اگر کسی مریض کواس کے گردوں کی ضرورت پڑے تو میرے مرنے کے بعد میرے گردے اسے عطیہ کر دینا۔سوشل میڈیا پر سماجی کارکنوں کا کہنا تھا کہ آنجہانی مولیر جو زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے ہفتے


کے روز انتقال کر گئی تھیں نے اپنے اعضا کی ایک بڑی تعداد عطیہ کی۔ اس کے گردے دو الگ الگ مریضوں کو لگائے گئے جس سے ان کی زندگی بچ گئی ہے۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

قاسم پاشا کی گلیوں میں

آیا صوفیہ کے سامنے دھوپ پڑی تھی‘ آنکھیں چندھیا رہی تھیں‘ میں نے دھوپ سے بچنے کے لیے سر پر ٹوپی رکھ لی‘ آنکھیں ٹوپی کے چھجے کے نیچے آ گئیں اور اس کے ساتھ ہی ماحول بدل گیا‘ آسمان پر باسفورس کے سفید بگلے تیر رہے تھے‘ دائیں بائیں سیکڑوں سیاح تھے اور ان سیاحوں کے درمیان ....مزید پڑھئے‎

آیا صوفیہ کے سامنے دھوپ پڑی تھی‘ آنکھیں چندھیا رہی تھیں‘ میں نے دھوپ سے بچنے کے لیے سر پر ٹوپی رکھ لی‘ آنکھیں ٹوپی کے چھجے کے نیچے آ گئیں اور اس کے ساتھ ہی ماحول بدل گیا‘ آسمان پر باسفورس کے سفید بگلے تیر رہے تھے‘ دائیں بائیں سیکڑوں سیاح تھے اور ان سیاحوں کے درمیان ....مزید پڑھئے‎