’’شادی کے کھانے میں یہ ڈش کیوں نہیں رکھی ‘‘

  اتوار‬‮ 30 اپریل‬‮ 2017  |  6:00

نئی دہلی(این این آئی) گوشت کی تنگی کے شکار بھارتی ریاست اترپردیش کے ایک دلہا نے شادی کے کھانے میں صرف سبزیاں دیکھ کر شادی سے انکار کردیا۔بھارتی جریدے کی رپورٹ کے مطابق دلہا کی جانب سے شادی سے انکار کے بعد ایک دوسرے شخص نے نہ صرف سبزیوں کی ڈشز بلکہ دلہن کو بھی قبول کرنے کا اعلان کردیا۔رپورٹ میں شادی سے انکار کرنے والے دلہا کا مذہب تو واضح نہیں کیا گیا تاہم خیالظاہر کیا جارہا ہے کہ یہ ایک مسلم گھرانے کی شادی تھی اور شادی میں گوشت کی ڈشز نہ بنانے کی وجہ ریاست میں گائے


کے گوشت کی قیمت میں ہونے والا بھاری اضافہ ہے۔آؤٹ لک کی رپورٹ میں مزید کہا گیا کہ کہا جاتا ہے کہ مرد کے دل کا راستہ اس کے معدے سے ہو کر گزرتا ہے تاہم کبھی کبھی اس کا الٹ بھی سچ ہوتا ہے۔رپورٹ میں جمعر مظفرنگر میں ہونے والی اس شادی میں شرکت کرنے والے مہمانوں کے تاثرات بھی شامل کیے گئے، جو اس بات کی تصدیق کرتے ہیں کہ دلہا کی جانب سے شادی سے انکار کی وجہ کھانے میں صرف سبزیوں کی موجودگی تھی۔پنچایت کے حکام نے جریدے کو بتایاکہ شادی کی تقریب ختم ہونے کے قریب ہی تھی کہ مہمانوں میں سے ایک شخص نے آگے بڑھ کر دلہن سے شادی کی پیشکش کرڈالی جس کو فوراً منظور کرلیا گیا۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

ایک قیمتی سوال

چارلس ٹی میٹکلف  1785ءمیں کلکتہ میں پیدا ہوا تھا‘ والد ایسٹ انڈیا کمپنی میں ڈائریکٹر تھا اور کلکتہ میں تعینات تھا‘ چارلس نے لندن سے تعلیم حاصل کی اور 1801ءمیں واپس آ کر کمپنی کی نوکری کر لی‘ وہ بنگال کے گورنر جنرل لارڈ ویسلے کا پرائیویٹ سیکرٹری تھا‘ برطانیہ اس وقت نپولین بونا پارٹ سے لڑ رہا ....مزید پڑھئے‎

چارلس ٹی میٹکلف  1785ءمیں کلکتہ میں پیدا ہوا تھا‘ والد ایسٹ انڈیا کمپنی میں ڈائریکٹر تھا اور کلکتہ میں تعینات تھا‘ چارلس نے لندن سے تعلیم حاصل کی اور 1801ءمیں واپس آ کر کمپنی کی نوکری کر لی‘ وہ بنگال کے گورنر جنرل لارڈ ویسلے کا پرائیویٹ سیکرٹری تھا‘ برطانیہ اس وقت نپولین بونا پارٹ سے لڑ رہا ....مزید پڑھئے‎