سردیوں کا موسم موٹاپے کے شکار افراد کیلئے رحمت بن گیا اس موسم میں یہ طریقہ اپنائیں اور موٹاپے کو ہمیشہ کیلئے بھگائیں

21  ‬‮نومبر‬‮  2017

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)سردیوں میں زیادہ سونا موٹاپے کا باعث بنتا ہے، محققین سردیوں کا موسم موٹاپے کو کم کرنے کیلئے آئیڈیل قرار دیتے ہیں کیونکہ اس دوران آپ کے جسم میں موجود کیلوریز ختم ہونے کی وجہ سے چربی ختم ہوتی ہے جس کی وجہ سے آپ موٹاپے سے آسانی

سے نجات حاصل کرلیتے ہیں۔کچھ چیزوں کو استعمال کر کے سردیوں میں وزن کو گھٹایا جاسکتا ہے۔موسم سرما میں اگر آپ وزن کم کرنا چاہتے ہیں تو ایسے پھلوں کا استعمال کریں جن میں پانی کی مقدار زیادہ ہوتی ہے جیسے ’تربوز، کھیرا، ٹماٹر، ناریل کا پانی، لیموں، اسٹار فروٹ، گرے فروٹ وغیرہ کا استعمال کریں۔علاوہ ازیں سردیوں میں سوپ اور پانی کا استعمال بھی کیلوریز ختم کرتا ہے جو موٹاپے کو کم کرنے میں بہت مدد گار ثابت ہوتا ہے۔تحقیق سے معلوم ہوا کہ پانی صحت کے لیے بہت کارآمد ہے، لیکن بہت سارے لوگ خصوصاً گرمیوں میں ٹھنڈا پانی استعمال کرتے ہیں جس کی وجہ سے وزن میں تیزی سے اضافہ ہوتا ہے تاہم گرم پانی بھوک کو کم اور توانائی کو بڑھاتا ہے۔سردیوں میں زیادہ مقدار میں گرم (نارمل) پانی پینے سے جسم کا درجہ حرارت برقرار رہتا ہے جس کی وجہ سے جسم میں موجود زہریلا فضلا ختم ہوجاتا ہے۔یقیناً آپ کو یہ سن کر حیرت ہوگی کہ سورج کی روشنی وزن کو کم کرنے میں مددگار ہے، سورج سے نکلنے والی شعاعین دماغ میں بننے والے کیمیائی مادے کو ختم کرتی ہیں جس کی وجہ سے انسان ذہنی تناؤ کا شکار نہیں ہوتا۔

موضوعات:



کالم



ہم بھی کیا لوگ ہیں؟


حافظ صاحب میرے بزرگ دوست ہیں‘ میں انہیں 1995ء سے…

مرحوم نذیر ناجی(آخری حصہ)

ہمارے سیاست دان کا سب سے بڑا المیہ ہے یہ اہلیت…

مرحوم نذیر ناجی

نذیر ناجی صاحب کے ساتھ میرا چار ملاقاتوں اور…

گوہر اعجاز اور محسن نقوی

میں یہاں گوہر اعجاز اور محسن نقوی کی کیس سٹڈیز…

نواز شریف کے لیے اب کیا آپشن ہے (آخری حصہ)

میاں نواز شریف کانگریس کی مثال لیں‘ یہ دنیا کی…

نواز شریف کے لیے اب کیا آپشن ہے

بودھ مت کے قدیم لٹریچر کے مطابق مہاتما بودھ نے…

جنرل باجوہ سے مولانا کی ملاقاتیں

میری پچھلے سال جنرل قمر جاوید باجوہ سے متعدد…

گنڈا پور جیسی توپ

ہم تھوڑی دیر کے لیے جنوری 2022ء میں واپس چلے جاتے…

اب ہار مان لیں

خواجہ سعد رفیق دو نسلوں سے سیاست دان ہیں‘ ان…

خودکش حملہ آور

وہ شہری یونیورسٹی تھی اور ایم اے ماس کمیونی کیشن…

برداشت

بات بہت معمولی تھی‘ میں نے انہیں پانچ بجے کا…