بھائی کے ساتھ ڈانس کرنے پر مہوش حیات کو صنفی تنقید کا سامنا

  جمعہ‬‮ 16 جولائی‬‮ 2021  |  23:36

کراچی (این این آئی)اداکارہ مہوش حیات کی جانب سے بھائی کے ساتھ مختصر ڈانس ویڈیو شیئر کیے جانے کے بعد انہیں اور ان کے بھائی کو صنفی تنقید کا نشانہ جا رہا ہے۔مہوش حیات ماضی میں بھی بھائی کے ساتھ ڈانس ویڈیوز شیئر کر چکی ہیں اور ماضی میں بھی انہیں تنقید کا سامنا رہا ہے۔اداکارہ نے 16 جولائی کو انسٹاگرام پر بھائی دانشکے ساتھ مختصر ڈانس ویڈیو شیئر کی، جس میں دونوں مغربی طرز کی موسیقی پر ڈانس کرتے دکھائی دیے۔ویڈیو میں دونوں بہن بھائیوں کو گھر میں ہی ڈانس کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔اداکارہ کی جانب سے


ویڈیو شیئر کیے جانے کے بعد لوگوں ان پر خوب تنقید کی اور دونوں بہن و بھائیوں کو صنفی تنقید کا نشانہ بنایا۔کئی لوگوں نے دونوں بہن و بھائیوں کے لیے نامناسب زبان استعمال کرتے ہوئے دونوں کو ایک ہی صنف قرار دیا اور سوال کیا کہ دونوں میں سے بھائی کون ہے؟بعض لوگوں نے دونوں کی ویڈیو پر تنقیدی تعریف کرتے ہوئے دونوں کو خوبصورت بہنیں قرار دیا۔بعض لوگوں نے ان پر تنقید کرتے ہوئے سخت زبان بھی استعمال کی، تاہم کئی لوگوں نے ان کی تعریف بھی کی اور دونوں بہن و بھائیوں کی ڈانس کو اچھا قرار دیا۔مہوش حیات کی جانب سے شیئر کیے جانے کے بعد ان کی ویڈیو وائرل ہوگئی اور کئی سوشل میڈیا پیجز پر بھی انہیں شیئر کیا گیا، جہاں زیادہ تر لوگوں نے اداکارہ اور ان کے بھائی کو صنفی تنقید کا نشانہ بنایا۔مذکورہ ویڈیو سے قبل بھی اداکارہ کو ان کی ویڈیوز اور تصاویر پر تنقید کا نشانہ بنایا جاتا رہا ہے جب کہ وہ ماضی میں بھی بھائی کے ہمراہ ڈانس ویڈیوز شیئر کرتی رہی ہیں۔گزشتہ برس اپریل میں بھی مہوش حیات نے بھائی کے ہمراہ ’او نانا چیلنج‘ پر ڈانس ویڈیو شیئر کی تھی، جس پرانہیں خوب تنقید کا نشانہ بنایا گیا تھا۔علاوہ ازیں انہیں گانوں میں ڈانس پرفارمنس پر بھی تنقید کا نشانہ بنایا جاتا رہا ہے جب کہ ان کی تصاویر کو بھی مداح بولڈ قرار دے کر ان پر تنقید کرتے رہتے ہیں۔اداکارہ کو 2019 میں تمغہ امتیاز ایوارڈ دیے جانے پر بھی ان پر تنقید کی گئی تھی اور کئی لوگوں نے کہا تھا کہ وہ حکومتی ایوارڈ کے اہل نہیں ہیں۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

دو ہزاربچوں کا محسن

چترال کے دو حصے ہیں‘ اپر چترال اور لوئر چترال‘ دونوں اضلاع الگ الگ ہیں‘ لوئر چترال دریا کے کنارے آباد ہے اور وادی نما ہے جب کہ اپر چترال پہاڑوں پر چپکے‘ لٹکے اور پھنسے ہوئے دیہات کی خوب صورت ٹوکری ہے‘ ہم اتوار کی صبح اپر چترال کے ضلعی ہیڈ کوارٹر بونی کے لیے روانہ ہوئے‘ سفر مشکل ....مزید پڑھئے‎

چترال کے دو حصے ہیں‘ اپر چترال اور لوئر چترال‘ دونوں اضلاع الگ الگ ہیں‘ لوئر چترال دریا کے کنارے آباد ہے اور وادی نما ہے جب کہ اپر چترال پہاڑوں پر چپکے‘ لٹکے اور پھنسے ہوئے دیہات کی خوب صورت ٹوکری ہے‘ ہم اتوار کی صبح اپر چترال کے ضلعی ہیڈ کوارٹر بونی کے لیے روانہ ہوئے‘ سفر مشکل ....مزید پڑھئے‎