وفاقی حکومت کا بڑے اداروں کی اوور ہالنگ اور ری اسٹرکچرنگ کا فیصلہ  پی آئی اے کے ملازمین کی تعداد کم ہوکرکتنی رہ جائیگی؟تفصیلات آگئیں

  ہفتہ‬‮ 21 ‬‮نومبر‬‮ 2020  |  16:02

اسلام آباد (این این آئی)وفاقی حکومت کی جانب سے بڑے اداروں کی اوور ہالنگ اور ری اسٹرکچرنگ کا فیصلہ کرلیا گیا ۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق قومی ائیر لائنز  (پی آئی اے) کو ساڑھے 400 ارب روپے خسارے کا سامنا ہے اور اب پی آئی اے سے  ملازمین کی تعداد 14 ہزار سےکم کرکے 7 ہزار کر دی جائے گی جب کہ ساڑھے 3 ہزار ملازمین کو نجی شعبے سے آؤٹ سورس کیا جائے گا۔ پی آئی اے کے ساڑھے 3 ہزار ملازمین کو گولڈن ہینڈ شیک دیا جائے گا اور قومی ائیرلائن کو نئے منافع بخش روٹس پر چلایا


جائے گا۔دوسری جانب محکمہ ریلوے میں بھی بڑے پیمانے پر تبدیلیوں کا اعلان کیا گیا ہے جس کے تحت 5 کمپنیاں بنائی جائیں گی،ایک کمپنی ریگولیٹر، دوسری کمپنی ایم ایل ون کے معاملات پر کام کرے گی ، تیسری کمپنی حکومت کے پاس ہوگی جو انتظامی معاملات کی نگران ہوگی، چوتھی کمپنی فریٹ اور پانچویں پیسنجر کمپنی ہوگی۔علاوہ ازیں پاکستان اسٹیل کی بھی نجی سیکٹر کے ساتھ لیز ہو گی اور  پرائیویٹ سیکٹر کو پاکستان اسٹیل کی 1250 ایکڑ زمین دی جائے گی۔


زیرو پوائنٹ

بڑے چودھری صاحب

انیس سو ساٹھ کی دہائی میں سیالکوٹ میں ایک نوجوان وکیل تھا‘ امریکا سے پڑھ کر آیا تھا‘ ذہنی اور جسمانی لحاظ سے مضبوط تھا‘ آواز میں گھن گرج بھی تھی اور حس مزاح بھی آسمان کو چھوتی تھی‘ یہ بہت جلد کچہری میں چھا گیا‘ وکیلوں کے ساتھ ساتھ جج بھی اس کے گرویدا ہو گئے‘ اس ....مزید پڑھئے‎

انیس سو ساٹھ کی دہائی میں سیالکوٹ میں ایک نوجوان وکیل تھا‘ امریکا سے پڑھ کر آیا تھا‘ ذہنی اور جسمانی لحاظ سے مضبوط تھا‘ آواز میں گھن گرج بھی تھی اور حس مزاح بھی آسمان کو چھوتی تھی‘ یہ بہت جلد کچہری میں چھا گیا‘ وکیلوں کے ساتھ ساتھ جج بھی اس کے گرویدا ہو گئے‘ اس ....مزید پڑھئے‎