20 روپے یونٹ بجلی کے بل سے انڈسٹری نہیں چل سکتی حکومت کو صاف صاف بتا دیا گیا

  جمعرات‬‮ 13 فروری‬‮ 2020  |  16:59

اسلام آباد (این این آئی)آل پاکستان ٹیکسٹائل ملز ایسوسی ایشن (اپٹما) نے خبردار کیا ہے کہ ٹیکسٹائل صنعتوں کو تمام سرچارجز سمیت بجلی کے بل ادا کرنا پڑے تو پنجاب کی متعدد ملیں بند ہو جائیں گی۔برآمدی ٹیکسٹائل صنعتوں کو سرچارجز سمیت بجلی کے بل ملنے پر اپٹما نے ایک بیان جاری کیا جس میں کہا گیا کہ لیسکو نے ٹیکسٹائل صنعتوں کو تمام سرچارجز عائد کرکے بجلی کے بل بھجوا دئیےاور اس طرح ٹیکسٹائل ملوں کوبجلی 20 روپے فی یونٹ میں پڑے گی۔بیان میں کہا گیا کہ قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی نے بجلی کے بلوں پر عائد سر


چارج وصول کرنے سے روک دیا تھا، قائمہ کمیٹی نے سرچارج کا معاملہ اقتصادی رابطہ کمیٹی کو بھجوانے کا کہا تھا، وزیراعظم نے بھی جنوری 2019 میں سر چارجز ختم کردیئے تھے تاہم بیورو کریسی وزیر اعظم کے فیصلوں پر عمل نہیں کر رہی،حکومت کو ناکام بنایا جارہاہے۔اپٹما کے مطابق اس سے قبل ٹیکسٹائل صنعتیں تقریباً 12 روپے فی یونٹ کے حساب سے بل ادا کر رہی تھیں، 20 روپے فی یونٹ بجلی کے بل سے انڈسٹری نہیں چل سکتی۔‎


موضوعات: